پشین:پولیس اہلکاروں سمیت پانچ ہلاک

فائل فوٹو
Image caption گزشتہ کچھ سال سے بلوچستان میں پولیس اہلکاروں پر درجنوں حملے ہو چکے ہیں

پاکستان کے صوبہ بلوچستان کے ضلع پشین میں ایک دھماکے میں تین پولیس اہلکاروں سمیت پانچ افراد ہلاک ہو گئے ہیں۔

پشین پولیس کے سربراہ محبوب رشید نے بی بی سی کو بتایا کہ کوئٹہ سے تقریباً ساٹھ کلومیٹر دور سنگر کے علاقے میں ایک مقام پر جیسے ہی پولیس کی موبائل گاڑی پہنچی تو بم دھماکہ ہو گیا۔

انہوں نے بتایا کہ دھماکے کے نتیجے میں پولیس کے تین اہلکار اور دو راہگیر ہلاک ہو گئے ہیں۔

اس واقعے میں دو پولیس اہلکاروں سمیت آٹھ افراد زخمی بھی ہوئے ہیں اور زخمیوں میں سے تین کی حالت تشویشناک ہے جنہیں صوبائی دارالحکومت کوئٹہ منتقل کر دیا گیا ہے۔

کوئٹہ میں بی بی سی کے نامہ نگار کے مطابق پشین میں اکثریت پشتون آبادی کی ہے اور اس علاقے میں پہلے بھی شدت پسندی کے واقعات ہوئے ہیں لیکن یہ صوبے میں قدرے پرامن علاقہ تصور کیا جاتا ہے۔

چند روز پہلے ہی پشین میں ایک مدرسے میں دھماکے سے ایک حملہ آور ہلاک اور دو زخمی ہوگئے تھے۔

ابھی تک کسی تنظیم نے اس واقعے کی ذمہ داری قبول نہیں کی ہے۔

پاکستان کے رقبے کے لحاظ سے سب سے بڑے صوبے بلوچستان میں سال دو ہزار چھ سے حالات زیادہ خراب ہیں۔

یہاں شدت پسندی کے متعدد واقعات کے علاوہ لاپتہ افراد اور مسخ شدہ لاشیں ملنے کے واقعات پیش آتے رہے ہیں۔

اسی بارے میں