کراچی: بھورو بھیل کی لاش کی بےحرمتی پر مظاہرے

Image caption کراچی میں مظاہرین نے عوام کو اس اقدام پر اکسانے والوں کی گرفتاری کا مطالبہ کیا

پاکستان کے صوبہ سندھ کے ضلع بدین میں ہندو نوجوان کی قبر کھود کر لاش کی بے حرمتی کے واقعے کے خلاف صوبے کے مختلف شہروں میں احتجاجی مظاہرے کیے گئے ہیں۔

یہ واقعہ گزشتہ اتوار کو پنگریو نامی شہر میں پیش آیا تھا جب مقامی مذہبی جماعتوں نے حاجی فقیر قبرستان میں بھورو بھیل نامی نوجوان کی تدفین کے خلاف ہڑتال کی تھی۔

اس ہڑتال کے دوران ایک احتجاجی جلوس بھی نکالا گیا، جس میں شامل نوجوان قبرستان پہنچے تھے اور قبر کھود کے بھورو بھیل کی لاش نکال لی تھی۔

چشم دید گواہوں کے مطابق لاش کو قبر سے نکال کر گھسیٹا گیا اور ویران علاقے میں پھینک دیا گیا اور بعد میں لواحقین نے دوسرے مقام پر ان کی تدفین کی۔

اس اقدام پر روایتی ترقی پسند قوم پرست جماعتوں کا سخت رد عمل سامنے آیا ہے اور جہاں اخباروں میں اس کے خلاف کالم اور اداریے لکھے گئے وہیں کراچی میں جمعرات کو عوامی جمہوری پارٹی، سندھ نیشنل موومنٹ اور سول سوسائٹی کی جانب سے احتجاجی مظاہرہ کیا گیا۔

مظاہرین نے مطالبہ کیا کہ اس واقعے میں ملوث مسجد کے پیش امام اور دیگر مذہبی جماعتوں کے ان رہنماؤں کو گرفتار کیا جائے جنہوں نے لوگوں کو ورغلایا اور اس کے علاوہ پولیس اہلکاروں کو بھی معطل کیا جائے جو اپنے فرائض سر انجام دینے میں ناکام رہے۔

Image caption حیدرآباد سمیت دیگر شہروں میں بھی مظاہرے کیے گئے

کراچی میں مظاہرین سے خطاب کرتے ہوئے سیاسی اور سماجی تنظیموں کے رہنماؤں کا کہنا تھا کہ بھورو بھیل کی لاش کئی گھنٹے کھلے میدان میں پڑی رہی اور نہ صرف مقامی پولیس نے مشتعل افراد کو قبر کھودنے سے نہیں روکا بلکہ اس کی دوبارہ تدفین کی بھی ہمت نہیں کی۔

اس واقعے کے خلاف حیدرآباد سمیت دیگر شہروں میں بھی مظاہرے کیےگئے ہیں اور جئے سندھ متحدہ محاذ کی جانب سے بارہ اکتوبر کو بھورو بھیل ڈے منانے کا اعلان کیا گیا ہے۔

ادھر پاکستان پیپلز پارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری نے بھی واقعے پر افسوس کا اظہار کیا ہے۔ انہوں نے سندھ حکومت کو ہدایت دی ہے کہ ملزمان کو گرفتار کرکے کیفر کردار تک پہنچایا جائے۔

بلاول بھٹو نے ایک پریس ریلیز میں کہا ہے کہ سندھ ہمیشہ امن اور صوفیوں کی دھرتی رہی ہے، پاکستان اور اسلام کا اقلیتوں کی بارے میں نظریہ بالکل واضح ہے کہ جو بھی ان کے مخالفت کرے گا اس کے خلاف کارروائی کی جائیگی۔

بلاول بھٹو نے بھورو بھیل کے خاندان کے ساتھ ہمدری کا اظہار کیا اور کہا کہ اس مشکل وقت میں وہ خود تو تنہا نہ سمجھیں۔

اسی بارے میں