خیبرپختونخوا: صوبائی وزیر قانون خودکش حملے میں ہلاک

Image caption اسرار اللہ گنڈاپور نے آزاد امیدوار کی حیثیت سے جیت کر تحریکِ انصاف میں شمولیت اختیار کی تھی

پاکستان کے صوبے خیبر پختونخوا کے وزیر قانون اسرار اللہ گنڈاپور ایک خود کش حملے میں ہلاک ہو گئے ہیں۔

پشاور میں بی بی سی کے نامہ محمود جان بابر نے اطلاع دی ہے کہ صوبائی وزیر کے حجرے میں ہونے والے خود کش حملے وزیر سمیت آٹھ افراد ہلاک ہو گئے ہیں۔

عینی شاہدین کے مطابق صوبائی وزیر اپنے گھر کے باہر جمع لوگوں سے عید مل رہے تھے جب یہ دھماکہ ہوا۔

اسرار اللہ گنڈا پور 2013 کے عام انتخابات میں ڈی آئی خان کے صوبائی حلقے پی کے 67 سے آزاد امیدوار کے طور پر جیتے تھے جس کے بعد انہوں نے پاکستان تحریک انصاف میں شمولیت اختیار کر لی تھی۔

تفصیلات کے مطابق خود کش حملہ آوور دو محافظوں کو ہلاک کر کے ان کے حجرے میں داخل ہوا اور اس نے خود کو دھماکے سے اڑا دیا۔

ہلاک ہونے والوں میں وزیر کے علاوہ سات اور افراد بھی شامل ہیں۔ اس حملے میں بارہ افراد زخمی بھی ہوئے۔ وزیر سے ملنے کے لیے کم از کم پانچ سو لوگ جمع تھے۔

تحریک انصاف کے رہنما عمران خان نے ایک ٹویئٹ میں اس واقعے پر صدمے اور غم کا اظہار کیا اور ہلاک ہونے والوں کو شہید قرار دیا۔

انہوں نے ایک اور ٹویٹ میں وفاقی حکومت پر زور دیا کہ وہ کل جماعتی کانفرنس میں ہونے والے فیصلے پر عملدرآمد کرے۔ انہوں نے کہا کہ پختوخواہ صوبے کے لوگ اور حکومت دہشت گردی کا نشانہ ہیں۔