پاکستان، افغانستان اور برطانیہ کے سربراہانِ مملکت کی ملاقات

Image caption تینوں سربراہان نے ملاقات میں خطے میں استحکام، امن اور خوشخالی کے لیے پاکستان اور افغانستان کے باہمی مفادات پر بات کی

پاکستان، افغانستان اور برطانیہ کے سربراہانِ مملکت کے درمیان منگل کو ملاقات ہوئی ہے جس میں فریقین نے قیام امن کے لیے اپنی ذمہ داریاں نبھانے کے عزم کا اعادہ کیا۔

پاکستانی وزیرِ اعظم نواز شریف اور افغان صدر حامد کرزئی نے لندن کی ٹین ڈاؤننگ سٹریٹ میں برطانوی وزیرِ اعظم ڈیوڈ کیمرون سے ملاقات کی ہے۔

پاکستانی وزیرِ اعظم کا عہدہ سنبھالنے کے بعد تینوں ممالک کے سربراہان کی یہ پہلی ملاقات تھی۔

تینوں سربراہان نے ملاقات میں خطے میں استحکام، امن اور خوشخالی کے لیے پاکستان اور افغانستان کے باہمی مفادات پر بات کی۔

انہوں نے ملاقات میں معاشی تعاون اور افغانستان کی زیرِ قیادت امن مذاکرات پر بھی بات کی اور اس بارے میں فریقین نے اپنی اپنی ذمہ داریاں نبھانے کے عزم کا اعادہ کیا۔

تینوں سربراہانِ مملکت کے درمیان یہ ملاقات ’اسلامی اقتصادی فورم‘ کے اجلاس کے بعد ہوئی۔ وزیرِ اعظم نے اس اجلاس کو برطانیہ کے لیے اسلامی دنیا کے ساتھ تجارت اور تعلقات میں بہتری کے لیے عمدہ موقع قرار دیا۔

اس سے پہلے ڈیوڈ کیمرون نے افغانستان کے صدر حامدکرزئی اور پاکستان کے وزیراعظم نوازشریف کا سہ فریقی مذاکرات کے لیے ٹین ڈاؤننگ اسٹریٹ میں خیر مقدم کیا۔

برطانیہ جانے سے قبل پاکستانی وزیر اعظم نواز شریف امریکہ کے دورے پر تھے اور پاکستان کی تمام سیاسی جماعتوں نے نواز شریف کے دورۂ امریکہ کو ناکام قرار دیا اور کہا کہ اس سے وابستہ توقعات پوری نہیں ہو سکی ہیں۔

اسی بارے میں