پاکستان کے زیر انتظام کشمیر میں بس حادثہ، دس افراد ہلاک

Image caption پاکستان کے زیر انتظام کشمیر میں اس سے پہلے بھی سڑک حادثات ہوتے رہے ہیں

پاکستان کے زیر انتظام کشمیر میں ایک بس کھائی میں گرنے سے دس افراد ہلاک اور چار زخمی ہو گئے ہیں۔

پاکستان کے سرکاری ٹی وی کے مطابق پیر کو راولپنڈی سے ایک بس پاکستان کے زیرِ انتظام کشمیر کے دارالحکومت مظفر آباد کے علاقے فارورڈ کہوٹہ جا رہی تھی کہ سیڑھیاں کے مقام پر ایک کھائی میں گر گئی۔

سرکاری ٹی وی کے مطابق اس حادثے میں دس افراد ہلاک اور چار زخمی ہو گئے۔

حادثے کے بعد امدادی کارروائیاں شروع کر دیں گئی ہیں اور زخمیوں کو ہسپتال منتقل کیا جا رہا ہے۔

پاکستان کے زیر انتظام کشمیر میں اس سے پہلے بھی سڑک حادثات ہوتے رہے ہیں جن میں بھاری جانی نقصان ہوا ہے۔

جون سنہ 2011 میں ایک نجی سکول کی وین نہر میں گرنے سے 12 بچے ہلاک ہوئے تھے، جبکہ جون سنہ 2013 میں ایک مسافر بس دریائے نیلم میں جا گری تھی جس کے نتیجے میں 22 افراد ہلاک ہوگئے تھے۔

پاکستان کے زیر انتظام کشمیر میں ٹریفک حادثات معمول بن چکے ہیں اور ان کی عمومی وجوہات مخدوش سٹرکیں، پبلک ٹرانسپورٹ کی خراب حالت، ڈرائیوروں کی غفلت، پہاڑی علاقے میں تیز رفتاری سے گاڑیاں چلانا اور گاڑیوں میں گنجائش سے زیادہ مسافر سوار کرنا ہیں۔

اسی بارے میں