مری: دو بسیں کھائی میں گرنے سے نو ہلاک

Image caption پاکستان میں ٹریفک کے حادثات عام ہیں (فائل فوٹو)

پاکستان کے صوبہ پنجاب کے تفریحی مقام مری جانے والے پہاڑی راستے پر دو بسوں کے کھائی میں گرنے سے کم از کم نو افراد ہلاک اور 20 سے زیادہ زخمی ہوگئے ہیں۔

راولپنڈی پولیس کے ایس پی صدر عارف شہباز نے بی بی سی اردو کو بتایا کہ یہ حادثہ بدھ کی شام راولپنڈی سے مری جانے والی سڑک پر سالگراں کے مقام پر پیش آیا۔

ان کا کہنا تھا کہ یہ حادثہ کراسنگ کے دوران پیش آیا۔

ایس پی صدر کے مطابق ایک بس مری سے راولپنڈی اور دوسری راولپنڈی سے مری جا رہی تھی اور تصادم کے بعد دونوں بسیں گہری کھائی میں بہنے والی ندی میں جا گریں۔

حادثے کی اطلاع ملتے ہی امدادی کارروائیاں شروع کر دی گئیں تاہم خراب موسم اور ضروری مشینری نہ ہونے کی وجہ سے اس عمل میں مشکلات کا سامنا ہے۔

Image caption حادثے کی اطلاع ملتے ہی امدادی کارروائیاں شروع کر دی گئیں

خیال رہے کہ اس علاقے میں بدھ کی صبح سے ہی بارش کا سلسلہ جاری ہے۔

جائے حادثہ پر موجود ایس پی صدر کے مطابق اب تک جائے حادثہ سے 9 لاشیں نکالی جا چکی ہیں جبکہ حادثے میں 23 افراد زخمی بھی ہوئے ہیں۔

حادثے میں ہلاک ہونے والے مسافروں کی لاشوں اور زخمیوں کو اسلام آباد کے پاکستان انسٹیٹیوٹ آف میڈیکل سائنسز کے علاوہ راولپنڈی کے ہسپتالوں میں منتقل کیا گیا ہے۔

پمز میں شعبۂ ہنگامی امداد میں موجود ڈاکٹر اقبال نے بتایا ہے کہ اب تک حادثے میں ہلاک ہونے والے چار افراد کی لاشیں وہاں لائی گئی ہیں جبکہ وہاں موجود 30 زخمیوں میں سے چار کی حالت تشویشناک ہے۔

پاکستان میں ٹریفک حادثات عام ہیں اور ان کی عمومی وجوہات مخدوش سڑکیں، ٹرانسپورٹ کی خراب حالت، ڈرائیوروں کی غفلت، پہاڑی علاقوں میں تیز رفتاری سے گاڑیاں چلانا اور گاڑیوں میں گنجائش سے زیادہ مسافر سوار کرنا بتائی جاتی ہیں۔

اسی بارے میں