مستونگ میں سیاح پر حملہ، حفاظتی عملے کے چھ اہل کار ہلاک

تصویر کے کاپی رائٹ Getty
Image caption مستونگ میں اس سے پہلے کئی مرتبہ شیعہ زائرین پر حملے ہو چکے ہیں

پاکستان کے صوبہ بلوچستان کے علاقے مستونگ میں ایران کے راستے پاکستان آنے والے سپین کے سائیکل سوار سیاح پر حملے میں اس کی حفاظت پر مامور چھ لیویز اہل کار ہلاک ہو گئے ہیں۔

مستونگ کی ضلعی انتظامیہ کے ایک اہل کار محمد اعظم نے بی بی سی کو بتایا کہ سیاحوں پر درینگڑ کے قریب پر مسلح افراد نے حملہ کیا۔

غیر ملکی سیاح کی حفاظت پر دس لیویز اہل کار تعینات تھے۔ ان کی جوابی کارروائی میں ایک حملہ آور بھی مارا گیا، جب چار اہل کار زخمی بھی ہوئے ہیں۔ اس کے علاوہ ہسپانوی سیاح بھی زخمی ہوئے ہیں۔

ایف سی کے اہل کار بھی لیویز کی مدد کے لیے علاقے میں پہنچ گئے ہیں۔ سکیورٹی فورسز علاقے میں حملہ آوروں کو تلاش کر رہی ہیں۔

سیاح اور لیویز کے زخمی اہل کاروں کو کوئٹہ منتقل کیا گیا ہے۔

مقامی حکام کے مطابق جہاں حملہ ہوا وہ پہاڑی علاقہ ہے اور وہاں موبائل سروس بھی نہیں ہے، جس کی وجہ سے معلومات پہنچنے میں مشکلات پیش آ رہی ہیں۔

اسی بارے میں