کراچی: تین لاشوں کی شناخت ہو گئی

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption پولیس کے مطابق مقتولین کو تشدد کے بعدگولیاں مار کر ہلاک کیا گیا

پاکستان کے سب سے بڑے شہر کراچی میں بدھ کو ملنے والی چار میں سے تین لاشوں کی شناخت ہوگئی ہے۔ ہلاک ہونے والے افراد کا تعلق قبائلی علاقوں سے تھا۔

رواں ہفتے ملیر کے علاقے سے اب تک سات لاشیں مل چکی ہیں۔

کراچی کے علاقے ملیر کے میمن گوٹھ تھانے کے ایس ایچ او نعیم خان نے بتایا کہ گلشن حدید نیشنل ہائی وے اور سپر ہائی وے کو ملانے والی سڑک سے گزشتہ روز چار لاشیں ملی تھیں جن کی جمعرات کو شناخت ہوئی ان میں سے دو محسود اور ایک یوسف زئی ہے اور ان کا تعلق قبائلی علاقوں سے تھا۔

پولیس کے مطابق مقتولین کو تشدد کے بعدگولیاں مار کر ہلاک کیا گیا، چاروں افراد لانڈھی کی مظفر آباد کالونی کے رہائشی تھے۔

ایس ایچ او نعیم خان کے مطابق لواحقین نے ان کی شناخت احسان اللہ، عنایت اللہ اور عبدالرزاق کے ناموں سے کی ہے۔

اس سے پہلے ملیر میں ولایت شاہ کے مزار کے قریب ایک ندی سے تین لاشیں ملی تھیں، جن کی شناخت کفایت، قاری شربت اور قاری احسان کے نامی سے کئی گئی تھی۔

ان تینوں افراد کا تعلق سہراب گوٹھ اور لانڈھی کے علاقوں کے رہائشی اور محسود قبیلے سے تعلق رکھتے تھے۔

پولیس واقعے میں کسی گروہ کے ملوث کا پتہ نہیں لگا سکی ہے اور نہ ہی کسی گروہ کی جانب سے ان واقعات کی ذمے داری قبول کی ہے۔

اسی بارے میں