اسلام آباد: یوگا سینٹر کو نامعلوم افراد نے آگ لگا دی

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption آرٹ آف لوّنگ کا افتتاح شری شری روی شنکر نے سنہ 2012 میں کیا تھا

پاکستان کے دارالحکومت اسلام آباد کے مضافاتی علاقے میں قائم آرٹ آف لوّنگ فاؤنڈیشن نامی یوگا سینٹر کو ہفتے کی رات نامعلوم افراد نے آگ لگا دی۔

یہ واقعہ اسلام آباد کے مضافاتی علاقے بنی گالا میں پیش آیا۔

بنی گالا پولیس سٹیشن کے مہرر نے بی بی سی سے بات کرتے ہوئے کہا کہ اس واقعے کی ایف آئی آر کے مدعی اس ادارے کے چوکیدار حسن علی ہیں۔

پولیس کے مطابق ہفتے کی شام ساڑھے آٹھ بجے آٹھ سے نو نامعلوم افراد آرٹ آف لوّنگ پر آئے اور وہاں موجود چوکیداروں سے رقم مانگی۔

ایف آئی آر کے مطابق ’چوکیداروں نے افراد سے کہا کہ ان کے پاس رقم نہیں ہے۔ اس پر نامعلوم افراد نے تینوں چوکیداروں کو باندھ دیا۔‘

ایف آئی آر کے مطابق ان افراد کے پاس پہلے ہی سے پیٹرول موجود تھا اور انہوں نے تین کمروں میں پیٹرول چھڑک کر آگ لگا دی۔

بنی گالا کی ایک رہائشی انجم رحمان نے بی بی سی کو بتایا کہ آرٹ آف لوّنگ اس سینٹر کی شریک چیئرمین شہناز من اللہ کے مکان ہی میں کھلا ہوا ہے۔ ان کے بقول جن کمروں کو آگ لگائی گئی ہے وہ گیٹ کے قریب ہی واقع ہیں۔

واضح رہے کہ آرٹ آف لوّنگ کا افتتاح شری شری روی شنکر نے سنہ 2012 میں کیا تھا۔

افتتاح کے موقعے پر انہوں نے کہا تھا کہ ان کے دورے کا مقصد پاکستان کے لیے امن کا پیغام لانا اور اسلام آباد اور کراچی میں اپنے آشرم کا افتتاح کرنا ہے۔

طالبان اور دیگر شدت پسندوں کے ساتھ بات چیت کرنے پر انہوں نے کہا تھا ’میں کھلے دل کے ساتھ طالبان اور دوسرے شدت پسند گروہوں کے ساتھ بات چیت کرنے کیے لیے تیار ہوں‘۔

’میں اپنی طرف سے پوری کوشش کروں گا اور طالبان تک امن کا پیغام پہنچاؤں گا۔ میں نے آج تک جہاں بھی اس قسم کی پہل کی ہے اس میں کامیابی ملی ہے‘۔

اسی بارے میں