مالم جبہ: برف پر بکھرے فیسٹیول کے رنگ

تصویر کے کاپی رائٹ

پاکستان میں سکی بازی (سکیئنگ) کے واحد مقام مالم جبہ میں پانچ روزہ برفانی میلہ شروع ہوگیا ہے جس کا افتتاح وزیر اعلیٰ خیبر پختونخوا پرویزخٹک نے کیا۔

پاکستانی فوج کے زیر اہتمام منعقد ہونے والےاس پانچ روزہ فیسٹول میں پیرا گلائیڈنگ ، ہینگ گلائیڈ نگ ،ٹوبو گینگ اور ایرو ماڈلنگ سمیت دیگر مقابلے برف پر خوبصورت رنگ بکھیر رہے ہیں۔ برفانی تفریحی سرگرمیوں کے ساتھ ساتھ محفل موسیقی کا بھی اہتمام کیا گیا ہے جس میں ملک کے نامور فنکار اور بینڈ شرکت کر رہے ہیں۔ یہ فیسٹول ہر سال منعقد کیا جاتا ہے۔

تصویر کے کاپی رائٹ

اس فیسٹیول میں مقامی لوگوں کا جوش و جذبہ نہ صرف بڑھتی ہوئی سیاحتی سرگرمیوں کی غمازی کرتا ہے بلکہ ملاکنڈ ڈویژن میں دیرپا اور پائیدار امن کو بھی فروغ دے سکتا ہے۔

ملاکنڈ ڈویژن میں فوج کے تعلقات عامہ کے ادارے کے ترجمان کرنل عقیل ملک نے بی بی سی کو بتایا کہ سوات میں پائیدار امن کی بحالی کے بعد نہ صرف زندگی تیزی سے معمول پر آ رہی ہے بلکہ ثقافتی اور سیاحتی سرگرمیاں بھی بڑھ رہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ اس فیسٹیول کے انعقاد کا مقصد عسکریت پسندی سے متاثرہ اس علاقے کی بحالی ،سیاحت کے فروغ اور علاقے کی معیشیت کو بہتر بنانا ہے۔

تصویر کے کاپی رائٹ

طالبان نے دوہزار اٹھ میں مالم جبہ میں نہ صرف پی ٹی ڈی سی ہوٹل کو نذر آتش کرنے کے بعد تباہ کر دیا تھا بلکہ سکی بازی کے اس مقام کو بھی شدید نقصان پہنچایا تھا۔ کشیدہ حالات کے دوران یہاں لگی ہوئی چیئر لفٹ بھی تباہ ہوگئی تھیں۔ سکی بازی میں شریک کھلاڑی احمد نے بتایا کہ مالم جبہ کی خوبصورت وادی میں ہونے والے سکی فیسٹول پر وہ بہت خوش ہیں مگر آٹھ سو فٹ بلند ڈھلوان پر کھلاڑیوں کو پہنچانے کے لیے چئیرلفٹ نہیں ہے۔ انہوں نے کہا کہ کھلاڑی مقابلہ شروع ہونے کے مقام تک پہنچتے پہنچتے تھک جاتے ہیں۔

پاکستان کے مختلف علاقوں سے آئے ہوئے سیاحوں کی بڑی تعداد خصوصی تفریحی سرگرمیوں سے لطف اندوز ہو رہی ہے جن میں خواتین اور بچوں کی بڑی تعداد شامل ہے۔ برفانی میلے میں شریک سیاحوں نے بتایا کہ یہاں کی خوبصورتی کو دیکھ کر وہ بہت خوش ہیں۔ انہوں نے بتایا کہ یہاں کا ماحول بہت اچھا ہے یہاں کے لوگ بہت مہمان نواز ہیں۔

تصویر کے کاپی رائٹ

مالم جبہ میں واقع دوکانوں اور چھوٹے ہوٹلوں پر سیاحوں کا کافی رش ہے۔ ایک سپر سٹور کے مالک فرمان علی نے بتایا کہ ہر سال ہونے والے اس فیسٹول کے انعقاد سے یہاں گہما گہمی شروع ہوجاتی ہے اور سیاحوں کی بڑی تعداد کی وجہ سے مقامی لوگوں کے لیے روزگار کے مواقع بڑھ جاتے ہیں اور ان کی آمدنی میں اضافہ ہوجاتا ہے۔

مبصرین کا خیال ہے کہ موسم سرما کے دوران سیاحت کو فروغ دینے کے لیے اس قسم کے فیسٹول کا انعقاد ایک مثبت قدم ہے جس سے سیاحت کی بحالی کے ساتھ ساتھ یہاں کی معیشیت بھی مستحکم ہوگی۔

اسی بارے میں