بدین: ’مقدس نام کی بے حرمتی‘3 ہندو گرفتار

تصویر کے کاپی رائٹ SHIRAZ HASSAN
Image caption توہین کا مبینہ واقعہ ہولی کے تہوار کے موقعے پر پیش آیا

سندھ کے ضلعے بدین میں مذہبی جذبات بھڑکانے اور فساد کرانے کی سازش کے الزام پولیس نے ہندو کمیونٹی کے تین افراد کا تین روز کا ریمانڈ حاصل کرلیا ہے۔

ویرسی کولھی، اشوک میگھواڑ اور نریش میگھواڑ کو جمعرات کو سول جج اینڈ جوڈیشل مجسٹریٹ دوئم ماتلی کی عدالت میں پیش کیا گیا۔

اندرونِ سندھ میں بڑھتی شدت پسندی

دنبالو پولیس تھانے پر مولوی اکرام اللہ نے مقدمہ درج کرایا ہے، پیر سخی عثمان شاہ گاؤں کی مرکزی سڑک پر لوگوں نے ہولی کے رنگ سے مقدس نام تحریر دیکھا، جس سے ان کے مذہبی جذبات بھڑکے۔

مولوی اکرام اللہ کی فریاد پر مقدمہ درج کرکے ویرسی کولھی، اشوک میگھواڑ اور نریش میگھواڑ کو گرفتار کیا گیا۔

مقدس نام کی مبینہ توہین کی اطلاع پر علاقے میں صورتحال کشیدہ ہوگئی اور بڑی تعداد میں مذہبی جماعتوں کے کارکن جمع ہوگئے۔ جس کے بعد مذہبی جماعتوں کے رہنماؤں، مقامی علما اور پولیس حکام پر مشتمل کمیٹی بنائی گئی، جس نے تینوں افراد پر مقدمہ درج کرنا کا فیصلہ کیا، جن کے نام مولوی اکرام اللہ نے تجویز کیے۔

ایس ایچ او دنبالو پولیس شاہنواز خاصخیلی کا کہنا ہے کہ تحقیقات کے بعد مقدمے میں ملزمان کو نامزد کیا گیا، جب ان سے سوال کیا گیا کہ ان مبینہ ملزمان کی کسی نے شناخت کی یا کسی نے یہ عمل کرتے ہوئے دیکھا تھا تو ایس ایچ او اس کا جواب نہیں دے سکے۔

بدین ضلعے میں گزشتہ چار ماہ میں اپنی نوعیت کا یہ دوسرا واقعہ ہے، اس سے پہلے اکتوبر میں ایک قبرستان سے بھورو بھیل نامی ہندو نوجوان کی لاش قبر سے نکال کر اس کی بے حرمتی کی گئی تھی، بعض مذہبی جماعتوں کا کہنا تھا کہ مسلمانوں کے قبرستان میں اس کی تدفین کی گئی ہے، جبکہ بھیل کمیونٹی کا موقف تھا کہ وہ کئی دہائیوں سے اپنے مردے وہاں دفناتے آئے ہیں۔

دوسری جانب سپریم کورٹ کے چیف جسٹس تصدق حسین جیلانی نے لاڑکانہ میں ہندو کمیونٹی پر حملے کی اطلاعات کا نوٹس لے کر عدالتی تحقیقات کا حکم جاری کیا ہے، کراچی رجسٹری میں سماعت کے دوران چیف جسٹس نے سیشن جج لاڑکانہ کو ہدایت کی ہے پندرہ روز میں رپورٹ پیش کی جائے۔

یاد رہے کہ ہندو کمیونٹی کے مذہبی تہوار ہولی کی شب لاڑکانہ میں بھی مقدس اوراق کی مبینہ بے حرمتی پر صورتحال کشیدہ ہوگئی تھی، جس میں ہندو کمیونٹی کی دھرم شالا اور مندر کو نقصان پہنچایا گیا۔

اسی بارے میں