’جو بھی ملوث ہوا اسے کیفرِ کردار تک پہنچایا جائے گا‘

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption یہ افسوسناک واقعہ ہے، آپریشن اپنی جگہ جاری ہے اور اس کے اچھے اثرات بھی مرتب ہوئے ہیں: نواز شریف

نواز شریف نے صحافی حامد میر، ان کے اہل خانہ اور صحافیوں کو یقین دہانی کرائی ہے کہ ان پر قاتلانہ حملے میں جو کوئی بھی ملوث ہوا اسے کیفر کردار تک پہنچایا جائے گا۔

کراچی میں حامد میر کی عیادت کے بعد میڈیا سے بات کرتے ہوئے وزیرِاعظم نے کہا کہ پولیس تفتیش کر رہی ہے، اور یقیناً یہ حکومت اور پولیس دونوں کے لیے چیلنج ہے جس کا ہمیں سراغ لگانا ہے۔

نواز شریف کا کہنا تھا کہ حکومت نے تین ججوں پر مشتمل کمیشن کی تشکیل کے لیے درخواست دی ہے اور یہ کمیشن بہت جلد اپنی کارروائی شروع کر دے گا۔

اس سے پہلے نواز شریف نے پیر کو کراچی میں حامد میر کی عیادت کی۔ جیو نیوز کے مطابق حامد میر نے انھیں واقعے کے بارے میں آگاہ کیا۔

وزیرِاعظم نے حامد میر کو یقین دہانی کرائی کہ عدالتی کمیشن تشکیل دیا جا رہا ہے اور ملزمان کو گرفتار کرکے کیفر کردار تک پہنچایا جائے گا۔

کراچی میں رینجرز کے ٹارگٹڈ آپریشن کے دوران اس نوعیت کا واقعہ پیش آنے پر وزیرِاعظم کا کہنا تھا کہ یہ افسوسناک واقعہ ہے، آپریشن اپنی جگہ جاری ہے اور اس کے اچھے اثرات بھی مرتب ہوئے ہیں۔

نواز شریف کے مطابق ملک میں مجموعی طور پر ایسی لہر تو پچھلے کئی سالوں سے چل رہی ہے اور اس پر قابو پانے کے لیے ہم اپنا فرض ادا کر رہے ہیں اور اس میں کوئی کوتاہی نہیں کریں گے۔

طالبان سے مذاکرات کے بارے میں وزیرِاعظم نے محتاط انداز میں بات کرتے ہوئے کہا کہ کوشش تو کافی عرصے سے جاری ہے ، کبھی کبھی اونچ نیچ بھی ہوجاتی ہے لیکن ہم اپنی جانب سے پوری خلوص کے ساتھ کوشش کر رہے ہیں کہ مذاکرات کے ذریعے معاملات حل کر لیں۔

اسی بارے میں