’قومی سلامتی میں آئی ایس آئی کا کردار بہت اہم‘

تصویر کے کاپی رائٹ Reuters
Image caption ملک کی اندرونی اور بیرونی صورتحال پر بریفنگ دی گئی

پاکستان بّری فوج کے سربراہ جنرل راحیل شریف نے کہا ہے کہ آئی ایس آئی کا قومی سلامتی کے تحفظ میں بہت اہم کردار ہے۔

انھوں نے یہ بات منگل کو انٹر سروسز اینٹیلی جنس ہیڈ کوارٹر کے دورے پر کی۔

انھوں نے آئی ایس آئی کے ڈائریکٹر جنرل لیفٹیننٹ جنرل ظہیرالاسلام سے ملاقات کی جہاں ان کو ملک کی اندرونی اور بیرونی صورتِ حال پر بریفنگ دی گئی۔

’فوج اپنے وقار کا ہر حال میں تحفظ کرے گی‘

حامد میر پر قاتلانہ حملہ، آئی ایس آئی پر الزام

پاکستانی فوج کے شعبہ تعلقات عامہ آئی ایس پی آر کی جانب سے بیان میں کہا گیا ہے کہ جنرل راحیل شریف نے کہا کہ پاک افواج نے قومی سلامتی کے تحفظ کے لیے قربانیاں دی ہیں۔

کئی روز قبل وفاقی وزرا اور پھر فوج کی جانب سے ایسے بیانات سامنے آئے تھے جس سے یہ تاثر پیدا ہو گیا تھا کہ سابق فوجی صدر پرویز مشرف کے خلاف غداری کے مقدمے میں موجودہ حکومت اور فوج کے درمیان تعلقات سرد مہری کا شکار ہو رہے ہیں۔

وفاقی وزیرِ دفاع خواجہ آصف نے پارلیمان میں اور پھر ایک نجی ٹی وی چینل کو دیے گئے انٹرویو میں کہا تھا کہ اب کوئی فوجی آمر جمہوریت کی بساط لپیٹ کر اقتدار پر شب خون نہیں مار سکے گا۔

اُنھوں نے کہا کہ پرویز مشرف اور کچھ فوجی جرنیلوں نے فوج کو اپنے ذاتی مفاد کے لیے استعمال کیا۔

خواجہ آصف نے کہا تھا کہ فوج کے ایک ادارے نے غداری کے مقدمے کے ملزم پرویز مشرف کو پناہ دے رکھی ہے۔ اس مقدمے کی سماعت کے دوران سابق فوجی صدر فوج کے زیر انتظام چلنے والے ادارے آرمڈ فورسز انسٹیٹیوٹ آف کارڈیالوجی میں زیر علاج رہے۔

اس بیان کے بعد فوج کے سربراہ جنرل راحیل شریف نے سات اپریل کو غازی بیس تربیلا میں پاکستان فوج کے سپیشل سروسز گروپ (ایس ایس جی) کے ہیڈکوارٹر کےدورے کے دوران کہا کہ تھا کہ پاکستانی فوج ملک کے تمام اداروں کو قدر کی نگاہ سے دیکھتی ہے لیکن پاکستان کی فوج اپنے وقار کا ’ہرحال میں‘ دفاع کرے گی۔

چیف آف آرمی سٹاف نے حالیہ دنوں میں’بعض عناصر کی طرف سے پاکستانی فوج پر غیر ضروری تنقید‘ پر افسروں اور جوانوں کے تحفظات کے بارے میں کہا کہ فوج اپنے ’وقار کا ہرحال میں تحفظ کرے گی۔‘

اس سے قبل منگل کی صبح پاکستان نے حتف تھری بیلسٹک میزائل کا کامیاب تجربہ کیا۔ حتف تھری زمین سے زمین تک 290 کلومیٹر تک ہدف کو نشانہ بنانے کی صلاحیت رکھتا ہے۔

میزائل جوہری اور روایتی ہتھیار لے جانے کی بھی صلاحیت رکھتا ہے۔ چیئرمین جوائنٹ چیفس آف سٹاف کمیٹی بھی اس موقعے پر موجود تھے۔

اسی بارے میں