پاکستان کے سب سے بڑے شمسی بجلی گھر کا سنگ بنیاد

تصویر کے کاپی رائٹ PID
Image caption حکومت کی مدت پوری ہونے سے قبل ہی ملک سے لوڈشیڈنگ کا خاتمہ ہو جائےگا: وزیراعظم

پاکستان کے وزیراعظم میاں نواز شریف نے جمعے کو صوبہ پنجاب کے جنوبی علاقے بہاولپور میں ملک کے سب سے بڑے شمسی بجلی گھر کا سنگ بنیاد رکھ دیا۔

اس منصوبے کو حکومت پنجاب، بینک آف پنجاب اور چین کی کمپنی میسرز ٹی بی ای اے لیمٹڈ کے مشترکہ تعاون سے قائم کیا جائے گا۔

13 کروڑ ڈالر لاگت کے منصوبے کا پہلا مرحلہ سات ماہ میں مکمل ہو گا اور اس کے ذریعے ایک سو میگاواٹ بجلی حاصل ہو گی جبکہ ڈھائی سال کے عرصے میں منصوبے کے مکمل ہونے پر ایک ہزار میگاواٹ بجلی حاصل کی جا سکے گی۔

بجلی سے محروم پاکستانیوں کو سورج کا سہارا

منصوبے کے افتتاح کے موقعے پر وزیراعظم نواز شریف نے کہا کہ وہ قوم سے وعدہ تو نھیں کرتے لیکن انھیں امید ہے کہ حکومت کی مدت پوری ہونے سے قبل ہی ملک سے لوڈشیڈنگ کا خاتمہ ہو جائےگا۔

وزیراعظم نواز شریف نے کہا کہ پاکستان کے قیام کے بعد سے اب تک 23 ہزار میگا واٹ بجلی پیدا کی گئی ہے تاہم موجودہ حکومت آئندہ 8 سال کے دوران سسٹم میں مزید 21000 میگاواٹ اضافے کی کوشش کر رہی ہے۔

خیال رہے کہ پاکستان میں گذشتہ کئی سالوں سے توانائی کا بحران جاری ہے اور سابق حکومت کے دور میں بجلی کے بحران کے خلاف متعدد بار احتجاجی مظاہرے ہوئے۔موجودہ حکمران جماعت مسلم لیگ نون نے انتخابات میں عوام کو بجلی کے بحران پر جلد قابو پانے کی یقین دہانی کرائی تھی اور اقتدار میں آتے ہی پانچ سو ارب کے قریب گردشی قرضے فوری ادا کیے تھے جس سے وقتی طور پر توانائی کے بحران میں کمی آئی تھی اور اب موسم گرما کے آغاز پر ایک بار پھر عوام کو طویل لوڈشیڈنگ کا سامنا ہے۔

اسی بارے میں