کراچی:’زندگی کا رکا ہوا پہیہ پھر چل پڑا‘

تصویر کے کاپی رائٹ Getty
Image caption کراچی کے علاوہ حیدرآباد، میرپورخاص، نواب شاہ اور سکھر میں بھی معمولاتِ زندگی بحال ہوگئے

پاکستان کے سب سے بڑے شہر کراچی میں الطاف حسین کی گرفتاری کے بعد سے رکا ہوا زندگی کا پہیہ جمعے کو ایک بار پھر چل پڑا۔

اکثر مارکیٹیں اور کاروباری مراکز کھل گئے جبکہ ٹرانسپورٹر سڑکوں پر گاڑیاں لے کر آگئے تاہم سندھ کے مختلف شہروں میں ایم کیو ایم کا دھرنا جاری ہے۔

کراچی تاجر اتحاد کے رہنما عتیق میر کا کہنا ہے کہ رینجرز کے ڈی جی نے ان سے ملاقات کر کے یقین دہانی کروائی تھی کہ تاجروں کو مکمل تحفظ فراہم کیا جائے گا، جس کے بعد دوبارہ کاروباری سرگرمیاں بحال ہوگئی ہیں۔

عتیق میر کا کہنا ہے کہ ایم کیو ایم بھی وضاحت کر چکی ہے کہ کاروبار بند کرانے والوں سے ان کا تعلق نہیں ہے۔ ان کا ذاتی خیال بھی یہ ہی ہے کہ یہ شرپسند عناصر ہیں جو ایسی صورتحال میں باہر نکل آتے ہیں، اور ان کا کسی سیاسی جماعت سے تعلق نہیں ہوتا۔

شہر کی تمام اہم مارکیٹیوں اور تجارتی مراکز پر رینجرز اور پولیس تعینات کی گئی ہے۔

ڈائریکٹر جنرل رینجرز میجر جنرل رضوان اختر نے گذشتہ روز ہول سیل بولٹن مارکیٹ کا دورہ کر کے تاجروں کو کاروبار بحال رکھنے کے لیے کہا اور شہریوں کو مشورہ دیا کہ وہ افواہوں پر کان نہ دھریں اور یہ کہ رینجرز شرپسندوں کے ساتھ سختی سے نمٹیں گے۔

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption کراچی کے علاوہ سندھ کے دوسرے شہروں میں بھی ایم کیو ایم نے دھرنے جاری رکھے ہیں

کراچی کے علاوہ حیدرآباد، میرپورخاص، نواب شاہ اور سکھر میں بھی معمولاتِ زندگی بحال ہوگئے ہیں اور تمام پیٹرول اور سی این جی سٹیشن کھل گئے ہیں تاہم ان شہروں میں ایم کیو ایم نے دھرنے جاری رکھے ہیں۔

جمعے کو ہی پاکستان کے سرکاری ٹی وی نے پاکستان کے دفترِ خارجہ کے ترجمان کے حوالے سے بتایا ہے کہ انھیں الطاف حسین پر لگنے والے الزامات کی تفصیلات کا علم نہیں۔

ترجمان نے کہا کہ الطاف حسین نے حکومتِ پاکستان سے قانونی مدد کی درخواست نہیں کی اور اگر وہ اس ضمن میں درخواست کریں گے تو وزیرِ اعظم نواز شریف کی ہدایت پر عمل کیا جائے گا۔

ان کا کہنا تھا کہ الطاف حسین کی وطن واپسی کے حوالے سے بھی حکومتی ہدایات پر عمل درآمد ہوگا۔

یاد رہے کہ لندن میں پاکستان ہائی کمیشن کے ایک اہلکار نے بی بی سی اردو کو بتایا تھا پاکستان کے قائم مقام ہائی کمشنر محمد عمران مرزا نے جمعرات کی صبح الطاف حسین سے ملاقات کی تھی۔

اسی بارے میں