ٹرین خالی آئی سکھ یاتری بس میں واہگہ پہنچے

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption سیکھ یاتری 17 جون کو بھارت واپس جائیں گے

بھارت سے سکھ یاتری ’گورو ارجن دیو کی یومِ شہادت‘ منانے کے لیے اتوار کو پاکستان پہنچنا شروع ہو گئے ہیں۔

پاکستان کے مقامی ذرائع ابلاغ کے مطابق بھارت کی طرف سے ریل گاڑی میں سفر کو غیر محفوظ قرار دینے کے بعد یہ یاتری بذریعہ بس لاہور پہنچے ہیں۔

مقامی میڈیا کے مطابق اس سے پہلے پاکستان نے سکھ یاتریوں کو پاکستان لانے کے لیے بھارت میں ایک خصوصی ریل گاڑی بھیجی تھی تاہم بھارتی حکام نے سکیورٹی خدشات ظاہر کرتے ہوئے یاتریوں کو ریل گاڑی کے ذریعے سفر کرنے کی اجازت دینے سے انکار کیا۔

پاکستان کے سرکاری خبر رساں ادارے اے پی پی کے مطابق تقربیاً 1000 سکھ یاتری ’گورو ارجن دیو کی یومِ شہادت‘ منانے کے لیے اتوار کو پاکستان آئیں گے۔

سرکاری خبر رساں ادارے نے کہا تھا کہ ایڈیشنل سیکریٹری اوقاف خالد علی، سردار شام سنگھ اور متروکہ املاک کے ٹرسٹ کے حکام وا ہگہ کی سرحد پر ان یاتریوں کا استقبال کریں گے۔

اے پی پی نےمتروکہ املاک کے ٹرسٹ کے ذرائع کے حوالے سے بتایا کہ اپنی آمد کے دن یاتری ننکانہ صاحب جائیں گے جبکہ 10 جون کو وہ فاروق آباد میں گوردوارا سُچا سودا جائیں گے، اس کے بعد وہ 11 جون کو حسن ابدال میں گوردوارا پنجا صاحب جائیں گے جہاں وہ تین دن قیام کے بعد 13 جون کو گوردوارا ڈیرہ صاحب جائیں اور 17 جون کو ان کی واپسی ہو گی۔

اسی بارے میں