شمالی وزیرستان سے 70 ہزار افراد کی نقل مکانی

تصویر کے کاپی رائٹ AP
Image caption چند خاندانوں نے ایف آر بکاخیل کے علاقے میں قائم کیمپ میں بھی پناہ لی ہے:اہلکار گورنر ہاؤس پشاور

پاکستان کے قبائلی علاقے شمالی وزرستان میں فوجی آپریشن کے نتیجے میں علاقے سے نقل مکانی کا سلسلہ جاری ہے اور گذشتہ چند دنوں کے دوران 70 ہزار کے قریب افراد محفوظ علاقوں میں منتقل ہوئے ہیں۔

شمالی وزیرستان سے ملنے والی اطلاعات کے مطابق بدھ کو دوسرے روز بھی مقامی انتظامیہ کی جانب سے میرعلی اور میران شاہ کے علاقوں میں کرفیو میں نرمی کی گئی اور اس دوران سینکڑوں افراد نے خواتین اور بچوں کے ہمراہ علاقہ چھوڑ کر محفوظ مقامات کی طرف نقل مکانی کی۔

مقامی لوگوں کا کہنا ہے کہ میرعلی اور میران شاہ کے علاقوں میں گاڑیاں کی عدم دستیابی کے باعث لوگ پیدل بنوں اور آس پاس کے علاقوں کی طرف جارہے ہیں جن میں خواتین اور بچے بھی شامل ہیں۔

دریں اثنا گورنر ہاؤس پشاور کے ایک اعلیٰ اہلکار نے بی بی سی کو بتایا کہ گذشتہ دو دنوں کے دوران تقریباً چھ ہزار خاندان گھر بار چھوڑنے پر مجبور ہوئے ہیں جن کی مجموعی تعداد 70 ہزار بنتی ہے۔

انھوں نے کہا کہ چند خاندانوں نے ایف آر بکاخیل کے علاقے میں قائم کیمپ میں بھی پناہ لی ہے جہاں متاثرین کےلیے تمام سہولیات فراہم کردی گئی ہیں۔

مقامی لوگوں کا کہنا ہے کہ زیادہ تر متاثرین بنوں ، کرک، ڈیرہ اسمعٰیل خان، کوہاٹ، ہنگو اور دیگر اضلاع کی طرف جا رہے ہیں۔

ادھر قدرتی آفات سے نمٹنے کے صوبائی ادارے پی ڈی ایم کے ڈائریکٹر جنرل طاہر اورکزئی نے کہا ہے کہ شمالی وزیرستان سے بے گھر ہونے والے افراد کو صوبے اور وفاق دونوں حکومتوں کی طرف سے نقد امداد دینے کے وعدے کیے گئے ہیں۔

انھوں نے کہا کہ صوبائی حکومت نے فی متاثرہ خاندان کو مکان کا کرایہ اور رمضان پیکیج دینے کا اعلان کیا ہے جن کے لیے کام کا آغاز کردیا گیا ہے۔

انھوں نے کہا کہ وزیر اعلیٰ خیبر پختونخوا پرویز خٹک نے نقل مکانی کرنے والے افراد کو صحت عامہ کی سہولیات فراہم کرنے کےلیے تمام متعلقہ اداروں کو ہدایات جاری کر دی ہیں۔

دوسری طرف شمالی وزیرستان سے نقل مکانی کر کے بنوں آنے والے افراد کی ایک گاڑی کو میران شاہ بکاخیل سڑک پر حادثہ پیش آیا ہے جس میں چار افراد ہلاک اور 20 زخمی ہوگئے ہیں۔

حکام کا کہنا ہے کہ ہلاک ہونے والوں افراد کی لاشیں بنوں کے ضلعی ہسپتال پہنچا دی گئی ہیں۔ مرنے والوں میں خواتین اور بچے شامل ہیں۔

اسی بارے میں