بلوچستان میں زیارت کے جوڈیشل مجسٹریٹ اغوا

تصویر کے کاپی رائٹ Getty
Image caption جوڈیشل مجسٹریٹ کا اغوا حالیہ چند دنوں بلوچستان میں اپنی نوعیت کا تیسرا بڑا واقعہ ہے

پاکستان کے صوبہ بلوچستان میں ضلع زیارت کے جوڈیشل مجسٹریٹ جام ساکا دشتی کو نامعلوم افراد نے اغوا کر لیا ہے۔

کوئٹہ میں لیویز کنٹرول کے ذرائع نے اغوا کے اس واقعے کی تصدیق کرتے ہوئے بتایا کہ جوڈیشل مجسٹریٹ زیارت پیر کی شام زیارت سے کوئٹہ کے لیے نکلے تھے۔

جب ان کی گاڑی زیارت کے علاقے لوہڑی ٹاپ کے قریب پہنچی تو نامعلوم مسلح افراد نے انھیں محافظ اور ڈرائیور کے ہمراہ اغوا کر لیا۔

اہلکار کے مطابق نامعلوم مسلح افراد نے پشین کے علاقے سرانان کے قریب جوڈیشل مجسٹریٹ کے ڈرائیور اور محافظ کو چھوڑ دیا جبکہ جوڈیشل مجسٹریٹ کو اپنے ہمراہ نامعلوم مقام کی طرف لے کر چلے گئے۔

زیارت لیویز کنٹرول کے ایک اہلکار سے بی بی سی کو بتایا ہے کہ زیارت کے ڈپٹی کمشنر اور اسسٹنٹ کمشنر سمیت حکام اس علاقے میں موجود ہیں جہاں مجسٹریٹ کے ڈرائیور اور محافظ اور چھوڑا گیا اور معاملے کی تحقیقات کی جا رہی ہیں۔

تاحال اس واقعے کے محرکات معلوم ہوئے اور نہ ہی کسی نے اس واقعے کی ذمہ داری قبول کی ہے۔

جوڈیشل مجسٹریٹ کا اغوا حالیہ چند دنوں بلوچستان میں اپنی نوعیت کا تیسرا بڑا واقعہ ہے۔

اس سے قبل نامعلوم افراد نے ضلع پشین سے ایک معروف تاجر جبکہ کوئٹہ سے اینٹوں کے بھٹے کے مالک کو اغوا کیا تھا۔

اسی بارے میں