کوئٹہ میں حملہ، دو پولیس اہلکار ہلاک

تصویر کے کاپی رائٹ BBC World Service
Image caption سریاب کا شمار کوئٹہ شہر کے ان علاقوں میں ہوتا ہے جہاں امن و امان کی صورتحال ٹھیک نہیں۔

پاکستان کے صوبے بلوچستان کے مرکزی شہر کوئٹہ میں ایک حملے میں دو پولیس اہلکار ہلاک ہوگئے ہیں ۔ پولیس اہلکاروں پر حملے کا واقع جمعے کے روز سریاب ملز کے علاقے میں پیش آیا۔

نیو سریاب پولیس کے ایک اہلکار نے بتایا کہ ’اس علاقے میں پولیس کے ایک ہیڈ کانسٹیبل سمیت دو اہلکار موٹر سائیکل پر اپنی ڈیوٹی پر جا رہے تھے،جب دونوں اہلکار سریاب ملز کے علاقے میں ڈاکخانے کے قریب پہنچے تو وہاں نامعلوم مسلح افراد نے ان پر فائر کھول دیا۔‘

پولیس کے مطابق فائرنگ کے نتیجے میں ایک پولیس اہلکار موقع پر ہلاک ہوگیا جبکہ دوسرا زخمی ہوا۔ تاہم وہ ہسپتال میں زخموں کی تاب نہ لاکر چل بسا۔ فائرنگ کے بعد حملہ آور بھی موٹر سائیکل پر فرار ہونے میں ہوگئے۔ پولیس نے اس واقعے کے بارے میں تحقیقات کا آغاز کردیا ہے ۔

سریاب کا شمار کوئٹہ شہر کے ان علاقوں میں ہوتا ہے جہاں امن و امان کی صورتحال ٹھیک نہیں۔چار روز قبل سریاب ہی کے علاقے میں نامعلوم افراد کی جانب سے تیزاب پھینکنے کے باعث چار خواتین زخمی ہوگئی تھیں۔

کوئٹہ سمیت بلوچستان کے دیگر علاقوں میں قانون نافذ کرنے والے اداروں پر حملوں کے متعدد واقعات رونما ہوئے ہیں لیکن رواں مہینے کے دوران جانی نقصان کے حوالے سے یہ تیسرا بڑا واقع ہے۔

اس سے قبل اس ماہ کے اوائل میں کوئٹہ کے شمال میں واقع کچلاک کے علاقے میں دو مختلف واقعات میں تین پولیس اہلکار جبکہ ضلع لورالائی کے علاقے دکی میں ایک حملے میں فرنٹیئر کور کے پانچ اہلکار ہلاک ہوئے تھے۔

اسی بارے میں