بلوچستان: کیچ میں دس شدت پسند ہلاک

تصویر کے کاپی رائٹ Getty
Image caption ’کارروائی میں ایف سی کا ایک اہلکار بھی ہلاک ہوا‘

پاکستان کے صوبہ بلوچستان کے ایران سے متصل ضلع کیچ میں فرنٹیئر کور نے دس سے زائد شدت پسندوں کو ہلاک کرنے کا دعویٰ کیا ہے۔

ایف سی کی جانب سے جاری ہونے والے ایک بیان کے مطابق خفیہ اداروں کی اطلاع پر شدت پسندوں کے خلاف گومازی کے علاقے میں سرچ آپریشن کیا گیا۔

سرچ آپریشن میں فرنٹیئرکور بلوچستان کے 600 اہلکاروں نے حصہ لیا جبکہ آپریشن کی نوعیت کو مدنظر رکھتے ہوئے ہیلی کاپٹرز کی مدد لی گئی۔

سرچ آپریشن کے دوران شدید فائرنگ کے نتیجے میں 10سے12 شدت پسند ہلاک جبکہ ایک ایف سی اہلکار ہلاک اور 4 زخمی ہوئے۔

سرچ آپریشن کے دوران شدت پسندوں کی پناہگاہوں سے بھاری مقدار میں باردوی سرنگیں، آئی ای ڈیز اورگولہ بارود برآمد کیا گیا۔

بیان میں کہا گیا ہے کہ سرچ آپریشن میں ہلاک ہونے والے اغواء برائے تاوان ٹارگٹ کلنگ، ڈکیتی اور ایم ایٹ شاہراہ پر سکیورٹی فورسزپر حملوں میں ملوث تھے۔کارروائی کے دوراشدت پسندوں کی 6 گاڑیاں بھی تباہ کی گئیں۔

دوسری جانب آپریشن کے حوالے سے بلوچ ہیومن رائٹس آرگنائزیشن کی چیئر پرسن بی بی گل بلوچ نے کہا ہے اس میں ہلاک ہونے والے شدت پسند نہیں بلکہ عام شہری تھے۔

انھوں نے فون پر بی بی سی کو بتایا کہ یہ ان کا آبائی علاقہ ہے اور اس کارروائی کے دوران وہ خود بھی اس علاقے میں موجود تھیں۔

اسی بارے میں