ہم سے ماضی میں غلطیاں ہوئیں، معافی دے دیں: بلاول

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption بلاول بھٹو اپنی تعلیم مکمل کرنے کے بعد ان دنوں عملی سیاست میں سرگرم ہیں

پاکستان پیپلز پارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری کا کہنا ہے کہ ہمیں اندازہ ہے کہ پیپلزپارٹی سےماضی میں غلطیاں ہوئی ہیں جس کے لیے وہ اپنے ہمدردوں سے انفرادی طور پر معافی مانگتے ہیں۔

بلاول بھٹو زرداری نے یہ بات ایک بیان میں کہی جو انٹرنیٹ پر جاری کیا گیا جس میں انہوں نے کہا کہ ہمارے ہمدرد مایوس ہیں تو ان سے انفرادی طور پر معافی مانگتا ہوں۔

ان کا کہنا تھا کہ اگر پیپلزپارٹی کے ہمدرد کسی اور جماعت میں شامل ہونے کا سوچ رہے ہیں تو سوچ سمجھ کرفیصلہ کریں۔

یہ بیان ایک ایسے موقع پر آیا ہے کہ جب گذشتہ انتخابات میں ایک نئی سیاسی قوت بن پر ابھرنے والی جماعت پاکستان تحریکِ انصاف نے کراچی اور لاہور میں بڑے سیاسی جلسے کیے ہیں۔

بلاول بھٹو زرداری نے اپنے بیان میں یہ بھی کہا کہ ہمیں اندازہ ہے کہ پیپلزپارٹی سے ماضی میں کئی غلطیاں ہوئی ہیں تاہم پیپلزپارٹی دوبارہ کارکنوں کا بھروسہ حاصل کرنے کے لیے پُرعزم ہے۔

تصویر کے کاپی رائٹ Twitter

ان کا کہنا تھا کہ پیپلز پارٹی جمہوری جماعت ہے اور پارٹی کے اندر احتجاج کو خوش آئند سمجھتی ہے لیکن ہمدرد کسی ایسی غیر جمہوری جماعت کے ساتھ تعاون نہ کریں جو انتہا پسندی کی حمایت کرتی ہیں۔

بلاول نے کہا کہ اگر ہمدرد پیپلز پارٹی سے مایوس ہیں تو احتجاج کے اور بھی راستے ہیں لیکن ہماری خامیوں کی سزا پاکستان اورجمہوریت کونہ دیں۔

انہوں نے خبردار کرتے ہوئے لکھا کہ پاکستان میں دائیں بازو کی حامی، ڈکٹیٹرشپ اور ٹی ٹی پی کے لیے ہمدردی رکھنے والی کئی جماعتیں ہیں۔

یاد رہے کہ بلاول بھٹو زرداری ان دنوں اپنی جماعت کی تنظیموں سے مل رہے ہیں اور انہوں نے حال ہی میں سیلاب سے متاثرہ علاقوں کا دورہ بھی کیا جس دوران انہوں نے مختلف علاقوں میں اپنی جماعت کی تنظیموں سے ملاقاتیں بھی کیں۔

اسی بارے میں