ہنگو:آئی ڈی پی کیمپ میں دھماکہ، چھ ہلاک

Image caption متاثرہ کیمپ میں اورکزئی، کرّم اور شمالی وزیرستان ایجنسی کے پناہ گزین رہائش پذیر ہیں

پاکستان کے صوبہ خیبر پختونخوا کے شہر ہنگو میں قبائلی علاقہ جات سے نقل مکانی کرنے والے افراد کے کیمپ میں دھماکے سے چھ افراد ہلاک اور 17 زخمی ہوئے ہیں۔

پولیس اہلکاروں نے بی بی سی کو بتایا ہے کہ دھماکہ اتوار کی دوپہر شہر سے دس کلومیٹر دور واقع خواجہ محمد کیمپ میں قائم بازار میں ہوا ہے۔

اس کیمپ میں قبائلی علاقے اورکزئی ایجنسی اور کرم ایجنسی کے متاثرین رہائش پذیر تھے جبکہ اب شمالی وزیرستان کے متاثرین بھی یہاں پہنچے ہیں۔

پولیس نے تاحال ہلاک شدگان کی شناخت کے بارے میں کچھ نہیں بتایا ہے جبکہ زخمیوں میں تین بچے بھی شامل ہیں۔

تاحال دھماکے کی نوعیت کا بھی علم نہیں ہو سکا ہے تاہم مقامی لوگوں کا کہنا ہے کہ دھماکے کی جگہ پر ایک تباہ شدہ موٹر سائیکل موجود ہے جس سے ایسا لگتا ہے کہ دھماکہ خیز مواد اس موٹر سائیکل میں نصب تھا ۔

پولیس نے دھماکے کے بعد علاقے کو گھیرے میں لے لیا ہے۔

خواجہ محمد کیمپ بنیادی طور پر اورکزئی اور کرم ایجنسی میں سنہ 2010 میں شروع کیے گئے فوجی آپریشن کے بعد قائم کیا گیا تھا۔

خیبر پختونخوا کے ضلع ہنگو میں حالیہ چند ہفتوں میں پرتشدد کارروائیوں اور پولیس اہلکاروں پر حملوں میں اضافہ دیکھا گیا ہے۔

پولیس حکام کا کہنا ہے کہ یہ واقعات شمالی وزیرستان میں جاری فوجی آپریشن کا رد عمل ہو سکتا ہے۔

تاہم ان کا دعوی ہے کہ شدت پسندوں کے بڑے حملے کرنے کی صلاحیت ختم کر دی گئی ہے اس لیے وہ اب اس طرح کی کارروائیاں کر رہے ہیں۔

اسی بارے میں