ملتان:ادھار چائے نہ دینے پر ہوٹل کے مالک کو آگ لگا دی

آگ فائل فوٹو تصویر کے کاپی رائٹ BBC World Service
Image caption طلبہ نے پٹرول چھڑک کر دکان مالک کو آگ لگا دی

جنوبی پنجاب کے شہر ملتان میں کالج کے طلبہ نے ادھار چائےنہ دینے پر نجی ہوٹل کے مالک کو آگ لگا دی ہے۔

یہ واقعہ ملتان کے علاقے ممتاز آباد میں صبح اس وقت پیش آیا جب ٹیکنالوجی کالج کے چار طلبہ چائے پینے ہوٹل پر گئے۔

ملتان پولیس کے ترجمان فیصل جہاں کے مطابق چائے کے پیسے پر ان طلبہ کا ہوٹل کے مالک سے جھگڑا ہوا۔

طلبہ چائے کے پیسے دینے کو تیار نہیں تھے اور ہوٹل کا مالک ادھار چائے دینے کو راضی نہیں تھا۔

معین معاویہ اور دو دوسرے طلبہ کی ہوٹل کے مالک نعیم سے تلخ کلامی بڑھی تو انھوں نے مار پیٹ شروع کی اور پھر اس پر پیٹرول چھڑک کر آگ لگا دی جس سے نعیم شدید زخمی ہوگیا۔

آگ لگانے کے بعد چاروں طلبہ فرار ہوگئے۔ نعیم کو نشتر ہسپتال منتقل کرکے مقدمہ درج کرلیا گیا ہے۔

ملتان پولیس کے ترجمان کے مطابق نعیم کی حالت خطرے سے باہر ہے اور مقدمے کے مرکزی ملزم معین کو گرفتار کرلیا گیا ہے۔

جبکہ دوسرے ملزمان کی گرفتاری کے لیے چھاپے مارے جارہے ہیں۔

اسی بارے میں