پنجاب اور بلوچستان میں ٹریفک حادثات، 10 افراد ہلاک

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption حال ہی میں صوبہ سندہ کے علاقے خیر پور میں مسافر بس اور ٹرک کے تصادم میں 60 افراد ہلاک ہو گئے تھے

پاکستان کے صوبہ بلوچستان کے شہر خضدار اور صوبہ پنجاب کے شہروں رحیم یار خان اور راجن پور میں ٹریفک حادثات کے نتیجے میں دس افراد ہلاک اور 39 زخمی ہوئے ہیں۔

پاکستان کے سرکاری ذرائع ابلاغ کا کہنا ہے کہ پہلا حادثہ بلوچستان کے علاقے حضدار کے قریب رات دیر گئے پیش آیا۔ اس سڑک حادثے کے دوران کوئٹہ سے کراچی جانے والی بس الٹ گئی۔اس واقعے میں چار افراد ہلاک اور 28 زخمی ہوئے۔ زخمی مسافروں کو سول ہسپتال خضدار منتقل کیا گیا ہے۔

دوسرا سڑک حادثہ رحیم یار خان کے قریب صادق آباد بائی پاس پر اُس وقت ہوا جو مسافر بس سامنے سے آنے والے ٹرالر سے ٹکرا گئی۔ اس حادثے میں تین افراد ہلاک اور دس زخمی ہوئے ہیں۔

زخمیوں کو صادق آباد تحصیل ہسپتال منتقل کیا گیا ہے۔

تیسرا ٹریفک حادثہ اتوار کو راجن میں فیض آباد کے قریب ہوا۔ اس واقعے میں آئل ٹینکر ایک کار سے ٹکرائی جس کے نتیجے میں تین افراد ہلاک اور زخمی ہوا۔

پاکستان میں ٹریفک حادثات عام ہیں اور ان کی عمومی وجوہات مخدوش سڑکیں، ٹرانسپورٹ کی خراب حالت، ڈرائیوروں کی غفلت، پہاڑی علاقوں میں تیز رفتاری سے گاڑیاں چلانا اور گاڑیوں میں گنجائش سے زیادہ مسافر سوار کرنا بتائی جاتی ہیں۔

حال ہی میں صوبہ سندہ کے علاقے خیر پور میں مسافر بس اور ٹرک کے تصادم میں 60 افراد ہلاک ہو گئے تھے۔ ہلاک ہونے والوں میں بچے و خواتین بھی شامل تھیں۔

اس سال جنوری میں صوبہ سندھ ہی کے ضلع نواب شاہ میں ایک ٹریفک حادثے میں 18 طلبا و طالبات سمیت 21 افراد ہلاک اور متعدد زخمی ہوگئے تھے۔

ڈپٹی کمشنر نواب شاہ عبدالعلیم لاشاری نے اس وقت کہا تھا کہ طالب علم کوئز مقابلے میں شرکت کے لیے نواب شاہ آئے تھے اور پروگرام کے بعد واپس جارہے تھے کہ ایک تیز رفتار ڈمپر بچوں کی ویگن سے ٹکرایا جس کے نتیجے میں 21 افراد ہلاک ہوگئے۔

اسی بارے میں