وزیرداخلہ کا کنٹینرز فوری طور پر ہٹانے کا حکم

تصویر کے کاپی رائٹ AP
Image caption شاہراہ دستور سے کنٹینرز ہٹانے کا عمل بدھ کی صبح متوقع ہے

وفاقی وزیرداخلہ چوہدری نثار علی خان نے اسلام آباد کی ضلعی انتظامیہ کی جانب سے مختلف شاہراوں پر رکھے گئے کنٹیر پر برہمی کا اظہار کیا ہے اور انھیں فوری طور پر ہٹانے کا حکم دیا ہے۔

ہمارے نامہ نگار نے بتایا کہ وزیرداخلہ چوہدری نثار علی خان نے منگل کو دارالحکومت کا دورہ کیا اور کہا کہ اگر سکیورٹی کے نقطہ نظر سے کنٹینرز کی ضرورت ہے تو انھیں سڑک کے کناروں پر رکھا جائے۔

وزیرداخلہ کی ہدایت کے بعد مارگلہ ٹاؤن، میریئٹ ہوٹل، سرینہ ہوٹل اور کشمیر ہائی وے سمیت مختلف شاہراہوں پر رکھے کنٹینرز کو ہٹایا جارہا ہے جبکہ شاہراہ دستور سے کنٹینرز ہٹانے کا عمل بدھ کی صبح متوقع ہے۔

ان کنٹینرز کو شاہراہوں کے کناروں پر کر دیا گیا ہے جس سے ٹریفک میں رکاوٹ دور ہو جائے گی۔

یاد رہے کہ 30 نومبر کو پاکستان تحریک انصاف کے سربراہ عمران خان نے اسلام آباد میں دھرنے کے مقام پر ایک بڑے جلسے کی کال دے رکھی ہے۔

وفاقی حکومت نے امن و امان کی صورتحال کو برقرار رکھنے کے لیے پولیس کے اضافی دستے بھی طلب کیے ہیں جن کی تعداد آٹھ ہزار کے لگ بھگ بتائی جاتی ہے۔

پولیس کی اضافی نفری پنجاب اور پاکستان کے زیر انتظام کشمیر سے بلوائی گئی ہے جنھیں پولیس لائن، جناح سٹیڈیم اور حج کمپلیس میں ٹھرایا جائے گا۔