کراچی میں آلاتِ حرب کی نمائش کا آغاز

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption ایکسپو سینٹر میں جاری اس نمائش میں پچاس سے زائد ممالک اور کمپنیوں کے وفود شریک ہو رہے ہیں

پاکستان کے وزیر اعظم میاں نواز شریف کا کہنا ہے کہ پاکستان اپنی خودمختاری اور علاقائی سالمیت کے دفاع کی مکمل صلاحیت رکھتا ہے اور وہ اپنی دفاعی ضروریات پوری کرنے کے علاوہ دنیا کی دفاعی ضروریات بھی پوری کر رہا ہے۔

کراچی میں پیر کو اسلحہ اور دفاعی ساز و سامان کی نمائش آئیڈیاز 2014 کے افتتاح کے بعد میڈیا سے بات کرتے ہوئے میاں نواز شریف کا کہنا تھا کہ پاکستان میں دفاعی ساز و سامان کی اتنی ایکسپورٹ کی صلاحیت ہے جس کا تصور بھی نہیں کیا جا سکتا لیکن اس شعبے میں مزید محنت کی ضرورت ہے۔

کراچی میں آلاتِ حرب کی نمائش: تصاویر

وزیراعظم نے کہا کہ پاکستان نے جدید دفاعی ہتھیار اور آلات کی تیاری کی صلاحیت حاصل کر لی ہے۔

انہوں نے کہا کہ پاکستان کے پاس اپنی سرحدوں کے تحفظ کیلئے انتہائی جدید دفاعی نظام موجودہ ہے۔

ایکسپو سینٹر میں جاری اس نمائش میں پچاس سے زائد ممالک اور کمپنیوں کے وفود شریک ہو رہے ہیں، جن کی سکیورٹی کے لیے شہر بھر میں غیر معمولی انتظامات کیے گئے ہیں۔

وزیر اعظم میاں نواز شریف کا کہنا ہے کہ ’جو غیر ملکی وفود آئے ہیں ان کی آنکھیں کھل گئی ہیں کہ پاکستان یہ کچھ بناتا ہے۔‘

بقول وزیر اعظم کے پاکستان بہت اچھی دفاعی منصوعات بناتا ہے جو دنیا کے دیگر ممالک کے مقابلے میں سستی بھی ہیں، یہ ہی وجہ ہے کہ بڑے بڑے مغربی ممالک پاکستان سے یہ مصنوعات درآمد کر رہے ہیں۔

پاکستان کے قیام سے لے کر اسلحہ سازی کی صنعت فروغ پا رہی ہے، ہر سال اس کی مہارت میں اضافہ ہو رہا ہے۔

وزیر اعظم میاں نواز شریف نے افتتاحی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ سرد جنگ کے خاتمے کے بعد دنیا پیچیدہ بن چکی ہے۔

انھوں نے کہا کہ پہلے ریاستیں صرف دیگر اقوام کے اقدامات اور ڈیزائن پر نظر رکھتی تھیں لیکن اب غیر ریاستی عناصر، دہشت گرد گروہوں حتیٰ کے کمپیوٹر ہیکرز کا بھی خیال رکھنا پڑتا ہے۔

میاں نواز شریف نے دہشت گردی کے خلاف جنگ میں پاکستان فوج کی کارکردگی اور قربانیوں کی تعریف کی اور کہا کہ مضبوط دفاع کے لیے تمام وسائل استعمال کیے جائیں گے۔

انہوں نے شمالی وزیرستان سمیت قبائلی علاقوں میں طالبان اور دشت پسندوں کے خلاف جاری آپریشن ضرب عضب کا حوالہ دیتے ہوئے کہا کہ حکومت پر عزم ہے کہ آپریشن ضرب عضب کو اس کے منطقی انجام تک پہنچائیں گے اور دہشت گردی کے کینسر سے نجات حاصل کریں گے۔

میاں نواز شریف کا کہنا تھا کہ ریاستوں کو ٹیکنالوجی ، آلات اور طریقہ استعمال سے باخبر ہونا چاہیے تاکہ ان عناصر سے نمٹا جائے، اس کے علاوہ اپنی سرحدوں پر نظر رکھنے کے ساتھ ساتھ ان گروہوں سے نمٹنے کی بھی صلاحیت ہونی چاہیے جو اسلحہ اٹھاکر اندرونی طور پر ریاست کو چیلینج کرتے ہیں۔

اسی بارے میں