عمران ملک میں انتشار پھیلا رہے ہیں: پرویز رشید

تصویر کے کاپی رائٹ BBC World Service
Image caption فیصل آباد میں جو بھی ہوا عمران خان اس کی ذمہ داری قبول کریں: پرویز رشید

وفاقی وزیراطلاعات پرویز رشید نے کہا ہے کہ عمران خان ملک میں انتشار پھیلا رہے ہیں، وہ اشتعال انگیز بیانات واپس لیں اور حکومت ان کی منتظر ہے۔

فیصل آباد میں پاکستان تحریک انصاف کی جانب سے فیصل آباد میں احتجاج کے تناظر میں اسلام آباد میں پریس کانفرنس سے خطاب میں پرویز رشید نے بتایا کہ پی ٹی آئی کے مسلح جتھوں نے سکولوں، سڑکوں اور دکانوں کو بند کرنے کی کوشش کی تاہم کوئی سکول بند نہیں ہوا۔

’پی ٹی آئی کے ڈنڈا بردار معصوم بچوں کو کلاسوں سے باہر نکلنے پر مجبور کرتے رہے لیکن بچوں نے ان کی بات ماننے سے انکار کیا، یہ بالکل وہی منظر ہے جو سوات میں ہوا۔‘

وفاقی وزیرِ اطلاعات نے کہا ہے کہ پی ٹی آئی کے کارکنوں نے کھلی دکانوں کو بند کروانے کی کوشش کی گئی: ’سڑکوں پر آگ جلا کر ٹریفک بند کرنے کی کوشش کی گئی۔‘

پرویز رشید نے عمران خان کے نام پیغام میں کہا کہ فیصل آباد میں جو بھی ہوا، وہ اس کی ذمہ داری تسلیم کریں۔

ان کا دعویٰ تھا کہ فیصل آباد کے عوام نے عمران خان کا ساتھ نہیں دیا، اور شہر کھلا ہوا ہے تاہم انھوں نے دھونس سے لوگوں کو اپنے حکم نامے پر عمل درآمد کروایا۔

’پرامن احتجاج پرتشدد احتجاج میں تبدیل ہوا ہے، آپ نے دھونس سے لوگوں کو ڈرا دھمکا کر لوگوں کو اپنے حکم نامے پر عمل کروانے کی کوشش کی ہے اور آپ یہ کہتے ہیں کہ آپ لاہور میں بھی یہی کریں گے۔‘

وزیراطلاعات نے پیر کی صبح پی ٹی آئی کے کارکن کی ہلاکت پر افسوس کا اظہار کیا اور بتایا کہ واقعے کی فوٹیج پولیس کو مل گئی ہے اور اس کی تحقیقات کے لیے تین ٹیمیں بنا دی گئی ہیں جو قاتل کی گرفتاری کے لیے کوشاں ہیں اور اس کا تعلق مسلم لیگ ن سے نہیں ہے۔

انھوں نے تصدیق کی کہ عمران خان اپنے جلوس کو سابق وزیر قانون رانا ثنا اللہ کے گھر کی جانب لے جا رہے ہیں۔

’آپ سمجھتے ہیں آپ رانا ثنا اللہ کے گھر حملہ کریں گے اس کے بعد آپ اپنے گھروں میں آرام سے بیٹھیں گے؟‘

حکومت لاہور اور کراچی میں امن کو کیسے قائم رکھے گی؟ اس سوال کے جواب میں پرویز رشید کا کہنا تھا کہ تشدد سے گریز کرنے کے لیے پولیس کو نرم ترین ہتھیار ’تیز پانی کی دھار‘ کے استعمال کی اجازت دی گئی ہے۔

انھوں نے کہا کہ مذاکرات سے لاتعلقی اور شہر بند کرنے کے بیانات کی صورت میں عمران خان نے اپنے نائب شاہ محمود قریشی کو ’شٹ آپ‘ کال دی ہے۔

واضح رہے کہ پاکستان تحریک انصاف نے 18 دسمبر کو ملک بند کرنے کی کال دی ہے، جبکہ فیصل آباد کے بعد اب 12 دسمبر کو وہ کراچی اور پھر 15 دسمبر کو لاہور میں اپنا احتجاج کرنے کا ارادہ رکھتی ہے۔

اسی بارے میں