حکومت اور تحریک انصاف میں مذاکرات کا آغاز

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption پی ٹی آئی کے ساتھ مذاکرات بالکل غیر مشروط ہیں: حکومت

حکومت اور حزب اختلاف کی جماعت تحریک انصاف کے درمیان مذاکرات کا دوبارہ آغاز ہو گیا ہے۔

تحریک انصاف کے مطابق اسلام آباد میں جماعت کے سیکریٹری جنرل جہانگیر ترین کے گھر پر ہونے والے مذاکرات میں وفاقی وزیر احسن اقبال اور تحریک انصاف کے رہنما اسد عمر نے شرکت کی۔

مذاکرات کا اگلا دور سنیچر کو ہو گا جس میں تحریک انصاف کے وائس چیئرمین شاہ محمود قریشی اور وفاقی وزیر خزانہ اسحاق ڈار شرکت کریں گے۔

سرکاری ٹی وی کے مطابق وفاقی وزیر احسن اقبال کا کہنا ہے کہ مذاکرات مثبت ماحول میں منعقد ہوئے۔

ایک دن پہلے بدھ کو پاکستان کی حکمران جماعت پاکستان مسلم لیگ نواز کی جانب سے غیرمشروط مذاکرات کی پیشکش پر تحریکِ انصاف کے سربراہ عمران خان نے کہا ہے کہ حکومت جیسے ہی جوڈیشل کمیشن تشکیل دے گی وہ احتجاج کا سلسلہ ملتوی کر دیں گے۔

بدھ کو ہی وزیرِ خزانہ اسحاق ڈار نے مذاکرات کی پیشکش کرتے ہوئے کہا تھا کہ حکومت نے پاکستان تحریکِ انصاف سے غیرمشروط مذاکرات شروع کرنے کا فیصلہ کیا ہے اور اب عمران خان کو اپنے احتجاجی پروگرام کو غیر معینہ مدت کے لیے ملتوی کرنا چاہیے۔

اس سے پہلے جمعرات کو وزیراعظم کے ترجمان نےکہا کہ تحریک انصاف کے ساتھ غیر مشروط مذاکرات کیے جائیں گے اور تحریک انصاف کے ساتھ رابطہ بحال ہو گیا ہے۔

وزیراعظم کے ترجمان ڈاکٹر مصدق ملک نے شمالی وزیرستان میں جاری آپریشن ضرب عضب کے بارے میں بات کرتے ہوئے کہا کہ آپریشن آخری مراحل میں داخل ہو رہا ہے اور جلد ہی متاثرین کی بحالی کا مرحلہ شروع ہو جائے گا۔

ڈاکٹر مصدق ملک نے بتایا کہ قبائلی علاقے شمالی وزیرستان سے نقل مکانی کرنے والے متاثرین کی واپسی پر انھیں تحفظ فراہم کیا جائے گا۔

ان کا کہنا تھا کہ متاثرہ علاقوں میں بحالی کے لیے سرمائے کا تخمینہ لگایا جا رہا ہے جسےحکومتِ پاکستان اپنے بجٹ میں سے لے گی۔

وزیراعظم کے ترجمان نے بتایا کہ حکومت نے 18 ماہ کی مدت میں 40 ارب ڈالر کی سرمایہ کاری پاکستان میں لانے کا طریقۂ کار طے کیا ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ حکومتِ قطر سے مائع گیس خریدنے کا منصوبہ زیر غور ہے۔

ڈاکٹر مصدق نے بتایا کہ کرغزستان اور تاجکستان سے براستہ افغانستان ایک ہزارمیگا واٹ بجلی ’کاسا معاہدے‘ کے تحت پاکستان آئے گی۔

وزیرِ اعظم کے ترجمان نے یہ بھی کہا کہ ملک میں مہنگائی کی شرح تیزی سے کم ہو رہی ہے اور ایک دو روز میں بجلی کی قیمت میں کمی کا اعلان بھی کیا جائے گا۔

اسی بارے میں