کراچی میں فائرنگ سے رینجرز کے دو اہلکار ہلاک

تصویر کے کاپی رائٹ Getty
Image caption کراچی میں رینجرز کی سربراہی میں ستمبر 2013 سے آپریشن جاری ہے

پاکستان کے سب سے بڑے شہر کراچی میں حکام کے مطابق مسلح افراد کی فائرنگ سے رینجرز کے دو اہلکار ہلاک ہو گئے ہیں۔

پولیس کے مطابق لانڈھی میں واقع شیرپاؤ کالونی اور خرم آباد میں رینجرز نے خفیہ اطلاع پر آپریشن شروع کیا جس کے دوران ایک گھر میں موجود مسلح افراد نے اہلکاروں پر فائرنگ کر دی۔

فائرنگ کے تبادلے میں ابتدائی طور پردو رینجرز اہلکار زخمی ہوئے تھے جنہیں ہسپتال منتقل کیا جا رہا تھا کہ راستے میں ہی ان کی موت واقع ہو گئی۔

فائرنگ کے دوران ایک شہری بھی زخمی ہوا جسے طبی امداد کے لیے ہسپتال منتقل کر دیاگیا۔

واقعے کے بعد رینجرز نے علاقے کا محاصرہ کر کے مزید نفری طلب کر لی اور گھر گھر تلاشی کا سلسلہ شروع کیا جو تاحال جاری ہے۔

پولیس کا کہنا ہے کہ آپریشن میں ایک گھر سے مالک مکان اور اس کے دو بھائیوں کو گرفتار کیا گیا جنھیں بعد میں پولیس نے رینجرز کے حوالے کردیا۔

پولیس کے مطابق رینجرز اہلکاروں نے بھی کچھ گرفتاریاں کی ہیں جن کی تفصیلات ابھی پولیس کے پاس نہیں البتہ ان میں اکثریت مقامی افراد کی ہے

پولیس کے مطابق ایک گھر سے آتش گیر مادہ اور دستی بم بھی برآمد ہوا۔

یاد رہے کہ کراچی کے مضافاتی علاقوں میں عمومی طور پر کالعدم تنظیموں کے کارکنوں کے خلاف کارروائیاں کی جاتی رہیں۔

دوسری جانب رینجرز حکام کی جانب سے اس واقعے کی تفصیلات ابھی تک سامنے نہیں آ سکی ہیں۔

اسی بارے میں