’فلاں پیٹرول پمپ کے باہر گاڑی نمبر فلاں‘

تصویر کے کاپی رائٹ New Yorker

ایک پیزا سروس کو صارف نے فون کیا کہ انھیں پیزا کی ڈیلیوری چاہیے۔ جب پتہ پوچھا تو انھوں نے بتایا کہ ’بلیو ایریا کے پی ایس او پیٹرول سٹیشن کے باہر لگی قطار میں گاڑی نمبر فلاں ہے۔‘

آپ سوچ رہے ہوں گے کہ یہ کیا مذاق ہے مگر سچ مانیے ایک پاکستانی پیزا ڈیلیوری سروس نے لاہور، اسلام آباد اور راولپنڈی میں ان سارے لوگوں کے لیے پیزا کی فراہمی کی سروس دینے کا اعلان کیا ہے جو پیٹرول کی تلاش میں سرگرداں پیٹرول پمپوں پر قطاروں میں کھڑے ہیں۔

جب پیزا کمپنی کے مالک عثمان نذیر احمد سے بات کی تو انھوں نے بتایا: ’چونکہ ہمارا بزنس کا ماڈل ڈیلیوری کی بنیاد پر ہے اور پاکستان میں بحران آتے رہتے ہیں، مگر ہم نے سوچا کہ ہم اس منفی صورتحال میں سے مثبت کیسے نکال سکتے ہیں۔‘

عثمان نے بتایا کہ ’ہم نے اندازہ لگایا کہ لوگ قطاروں میں تین گھنٹے چار گھنٹے کھڑے انتظار کر رہے ہیں، تو کیوں نہ انھیں قطار میں کھڑے کھڑے ڈیلیوری فراہم کی جائے۔ جیسے گرم انڈے والے انڈے بیچ رہے ہیں تو اس میں کاروبار کا موقع تو مل رہا ہے۔‘

عثمان نے بتایا کہ ’ہمیں جعلی آرڈر دینے والے بھی تھے جنھوں نے مذاق میں آرڈر دیا۔ لیکن جب ڈیلیوری والا پہنچا تو کوئی ویسی گاڑی نہیں تھی مگر وہاں موجود دوسرے لوگوں نے ہاتھوں ہاتھ پیزا لے لیا اور ہمیں مزید آرڈر بھی ملے۔‘

اسلام آباد کے ایک رہائشی رضوان نے اس آفر کا فائدہ اٹھایا اور بی بی سی سے بات کرتے ہوئے انھوں نے بتایا کہ ’ہم قطار میں کافی دیر سے لگے ہوئے تھے اور ہمیں بھوک بھی لگ رہی تھی۔ گاڑی بھی نہیں چھوڑ سکتے تھے۔ ہم نے فون کر کے آرڈر کیا اور جلد ہی ڈیلیوری بوائے بغیر کسی مسئلے کے ہم تک پہنچا اور ہم نے اس قطار میں کھڑے گرما گرم پیزا کھایا۔‘

پیزا پہنچانے والے رائیڈر شہزاد نے کہا کہ انھیں یہ سن کر پہلے تو حیرت ہوئی مگر انہیں اچھا لگا کہ انھوں نے کسی کی مدد بھی کی اور اپنے کاروبار کے لیے بہتر موقع حاصل کیا۔

پاکستان میں پیٹرول کی قلت کے بحران میں پیٹرول پمپوں کے باہر لگی لائنوں کی تصاویر اور ایندھن کی تلاش میں مارے مارے پھرنے والے لوگوں کا احوال تو آپ نے سوشل میڈیا یا ٹی وی کی سکرینوں پر دیکھا ہی ہو گا۔

حسن عبداللہ نے اپنے فیس بُک پر لکھا: ’میں نے کھانے پینے کا سامان، کیرم بورڈ، لڈو، وغیرہ ڈگی میں رکھیں۔ بچے خوشی سے پھولے نہیں سما رہے تھے۔ بیوی نے اپنی تمام سہیلیوں کو خوش خبری سنا دی تھی کہ وہ سب آج فیملیز ڈے آؤٹ پرگاڑی میں پیٹرول ڈلوانےجا رہے ہیں۔‘

گذشتہ دنوں جب وزیراعظم میاں نواز شریف سعودی عرب کے دورے پر تھے تو پاکستان میں ’نواز پیٹرول دونوں غائب‘ کا ہیش ٹیگ ٹرینڈ کرتا رہا تھا۔

اسی بارے میں