ایوانِ بالا کی 52 نشستوں کے لیے انتخابات تین مارچ کو

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption سینیٹ کے 52 ارکان 11 مارچ کو ریٹائرڈ ہو جائیں گے

پاکستان کے الیکشن کمیشن نے ایوانِ بالا یعنی سینیٹ کی 52 نشستوں پر تین مارچ کو انتخابات کا شیڈول جاری کردیا ہے۔

الیکشن کمیشن کے شیڈول کے مطابق امیدوار 12 اور 13 فروری کو کاغذاتِ نامزدگی جمع کروا سکیں گے۔

کاغذاتِ نامزدگی کی چھان بین 16 اور 17 فروری کو ہو گی جبکہ امیدواروں کی حتمی فہرست 25 فروری کو جاری کی جائے گی۔

خیال رہے کہ سینیٹ کے 52 ارکان 11 مارچ کو ریٹائرڈ ہو جائیں گے۔

پاکستان کے ایوانِ بالا میں اس وقت11 جماعتوں کی نمائندگی ہے مگر سوال یہ کیا جا رہا ہے کہ آیا ایوانِ زیریں یعنی قومی اسمبلی سے مستعفی ہونے والی جماعت پاکستان تحریک انصاف سینیٹ کے انتخابات میں حصہ لے گی یا نہیں۔

ایوانِ بالا میں اس وقت سب سے زیادہ نشستیں پاکستان پیپلز پارٹی کے پاس ہیں جس کے اراکین کی تعداد 40 ہے اور آئندہ انتخابات میں اس کی 21 نشستیں خالی ہو رہی ہیں۔

پاکستان پیپلز پارٹی کے ریٹائر ہونے والوں میں سینیٹر رحمٰن ملک، جہانگیر بدر اور چیئرمین سینیٹ نیر حسین بخاری نمایاں ہیں۔

عوامی نیشنل پارٹی کے 12 اراکین میں سے نصف یعنی چھ ارکان ریٹائر ہو رہے ہیں جن میں اہم نام پارٹی کے ترجمان زاہد خان کا ہے۔

بلوچستان نیشنل پارٹی عوامی بھی چار میں سے دو نشستیں کھو دے گی۔

پاکستانی سینیٹ میں موجود آزاد اراکین کی کُل تعداد 11 ہے جن میں سے چھ اراکین ریٹائر ہو رہے ہیں۔

جمعیت علمائے اسلائے فضل الرحمن گروپ کے پاس سینیٹ کی چھ نشستیں ہیں اور تین اراکین ریٹائر ہو رہے ہیں جن میں سب سے اہم نام مولانا غفور حیدری کا ہے۔

اسی طرح ایم کیو ایم کے سات اراکین سینیٹ میں سے تین اپنے عہدوں سے سبکدوش ہو رہے ہیں جن میں اہم نام بابر غوری کا ہے۔

سینیٹ میں نیشنل پارٹی کی اکلوتی نشست جماعت کے سربراہ حاصل خان بزنجو کے پاس ہے جو ریٹائر ہو رہے ہیں۔

مسلم لیگ (ق) کے پاس سینیٹ کی پانچ نشستوں میں سے صرف ایک نشست خالی ہو رہی ہے جو پارٹی کے صدر چورہدی شجاعت حسین کی ہے۔

حکمران جماعت مسلم لیگ نون کے اراکینِ سینیٹ کی تعداد 16 ہے جن میں سے نصف نشستیں خالی ہو رہی ہیں۔ ریٹائر ہونے والے میں وفاقی وزیر برائے اطلاعات و قانونی امور پرویز رشید شامل ہیں۔

سینیٹ میں پختونخوا ملی عوامی پارٹی کے پاس ایک نشست ہے جو انتحابات کے بعد خالی ہو جائے گی۔

مسلم لیگ فنکشنل کا شمار ان جماعتوں میں ہے جن کے پاس سینیٹ کے گذشتہ انتخابات میں ایک ہی نشست تھی جو اب بھی جماعت کے رہنما سینیٹر سید مظفر حسین شاہ کے پاس ہے جو سنہ 2018 میں ریٹائر ہوں گے۔

اسی بارے میں