’خیبر ایجنسی میں بمباری سے سات شدت پسند ہلاک‘

تصویر کے کاپی رائٹ PAF
Image caption خیبر ایجنسی میں گذشتہ سال دسمبر میں خیبر ون کے نام سے باقاعدہ فوجی آپریشن شروع کیا گیا تھا

پاکستان کے سرکاری ذرائع ابلاغ کے مطابق ملک کے قبائلی علاقے خیبر ایجنسی میں ایک فضائی کارروائی میں سات دہشت گرد ہلاک اور 15 زخمی ہو گئے ہیں۔

پاکستان ٹیلی ویژن نے عسکری ذرائع کے حوالے سے کہا ہے کہ یہ کارروائیاں وادی تیراہ میں کی گئی ہیں اور ان میں شدت پسندوں کے سات ٹھکانے بھی تباہ کر دیے گئے ہیں۔

تاہم پاکستانی فوج کے شعبہ تعلقات عامہ کی جانب سے اس سلسلے میں تاحال کوئی بیان جاری نہیں کیا گیا اور نہ ہی ہلاکتوں کی آزاد ذرائع سے تصدیق ہو سکی ہے۔

پاکستان کے قبائلی علاقوں شمالی وزیرستان اور خیبر ایجنسی میں شدت پسندوں کے ٹھکانوں پر سکیورٹی فورسز کی فضائی بمباری کا سلسلہ کافی عرصے سے جاری ہے۔

گذشتہ ماہ بھی ان دونوں علاقوں میں ہونے والے حملوں میں 125 سے زیادہ شدت پسندوں کی ہلاکت کے دعوے کیے گئے تھے۔

خیبر ایجنسی میں گذشتہ سال دسمبر میں خیبر ون کے نام سے باقاعدہ فوجی آپریشن شروع کیا گیا تھا جبکہ اس سے پہلے بھی وادی تیراہ میں سیکیورٹی فورسز کی کارروائیاں جاری تھیں۔

اس فوجی آپریشن اور سیکیورٹی فورسز کی کارروائیوں کی وجہ سے مختلف علاقوں سے لوگوں نے نقل مکانی بھی کی ہے۔

اسی بارے میں