ژوب: پولیو کارکن اور لیویز اہلکاروں کی لاشیں برآمد

تصویر کے کاپی رائٹ AP
Image caption لاشیں اسی علاقے سے ملی ہیں جہاں سے پولیو ٹیم کو اغوا کیا گیا تھا۔

پاکستان کے صوبہ بلوچستان کے ضلع ژوب میں حکام کا کہنا ہے کہ انھیں ان چار افراد کی لاشیں ملی ہیں جنھیں جمعے کو اغوا کیا گیا تھا۔

لیویز حکام کے مطابق یہ لاشیں ژوب اور قلعہ سیف اللہ کے سرحدی علاقے مرغہ کبزئی سے ہی پیر کی شب ملیں۔

ان مغویوں میں پولیو ٹیم کا ایک رکن، لیویز کے دو اہلکار اور گاڑی کا ڈرائیور شامل تھے۔

ان افراد کی لاشیں اسی علاقے سے ملی ہیں جہاں سے انھیں اغوا کیا گیا تھا۔

سکیورٹی فورسز نے ان کی بازیابی کے لیے اتوار کی شب سے سرچ آپریشن بھی شروع کیا تھا۔

اس آپریشن کے دوران تودہ کد زئی کے علاقے میں سکیورٹی اہلکاروں کی شدت پسندوں سے جھڑپ بھی ہوئی تھی جس میں دو شدت پسند ہلاک ہوگئے تھے۔

خیال رہے کہ ژوب کوئٹہ سے شمال مغرب میں افغانستان کی سرحد سے متصل ضلع ہے اور اس کی سرحد وزیرستان ایجنسی سے بھی ملتی ہے۔

ژوب سے متصل ضلع قلعہ سیف اللہ میں بھی چند روز قبل پی ٹی سی ایل کے پانچ اہلکاروں سمیت چھ افراد کو اغوا کیا گیا تھا جن کی تاحال بازیابی ممکن نہیں ہو سکی ہے۔

چار جنوری کو بھی قلعہ سیف اللہ سے دس مسافروں کو بھی اغوا کیا گیا تھا جن میں سے ایک کو ہلاک کرنے کے علاوہ چھ کو چھوڑ دیا گیا تھا جبکہ تین افراد ابھی تک اغوا کاروں کی تحویل میں ہیں۔

اسی بارے میں