شمالی وزیرستان سے چار شدت پسند گرفتار

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption شمالی وزیرستان میں گذشتہ سال جون میں آپریشن شروع ہوا تھا

پاکستان کے فوجی حکام کے مطابق قبائلی علاقے شمالی وزیرستان میں ایک کارروائی کے دوران چار شدت پسند گرفتار کیے گئے ہیں۔

فوج کے شبعہ تعلقات عامہ آئی ایس پی آر کے بیان کے مطابق شمالی وزیرستان میں ایک خفیہ اطلاع پر چار دہشت گردوں کا پیچھا کیا گیا۔

علاقے کا محاصرے کرنے اور سرچ آپریشن کے نتیجے میں دو شدت پسند رزمک بازار اور دو ایک قریبی احاطے سے پکڑے گئے۔

پاکستان کی فوج نے گذشتہ سال جون میں شمالی وزیرستان میں شدت پسندوں کے خلاف فوجی آپریشن’ضرب عضب‘ شروع کیا تھا۔

فوج نے شمالی وزیرستان میں آپریشن کے کچھ عرصے بعد خیبر ایجنسی میں بھی فوجی کارروائی کا آغاز کیا اور حکام کے مطابق یہ کارروائی شمالی وزیرستان سے شدت پسندوں کے بھاگ کر خیبر ایجنسی میں روپوش ہونے کے بعد شروع کی گئی۔

شمالی وزیرستان میں شدت پسندوں کی ایک بڑی تعداد کو فضائی کارروائیوں میں نشانہ بنایا گیا۔

شمالی وزیرستان میں فوجی کارروائی کے دوران ایجنسی میں متعدد ڈرون حملے بھی ہو چکے ہیں۔

حکام کا کہنا ہے کہ شمالی وزیرستان کے بیشتر علاقے شدت پسندوں سے صاف کر دیے گئے ہیں اور بہت جلد نقل مکانی کرنے والے افراد کو واپس اپنے علاقوں کو بھیجا جائے گا۔

اسی بارے میں