دیامر: رینجرز چیک پوسٹ پر حملہ، پانچ اہلکار زخمی

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption زخمیوں کو ہیلی کاپٹر کے ذریعے سی ایم ایچ راولپنڈی منتقل کردیاگیا ہے

پاکستنان کے شمالی علاقے گلگت بلتستان کے ضلع دیامر میں پولیس حکام کے مطابق رینجرز چیک پوسٹ پر دہشت گردوں کےحملے میں پانچ رینجرز اہکار شدید زخمی ہوگئے ہیں۔

صحافی انور شاہ کے مطابق زخمیوں کو ہیلی کاپٹر کے ذریعے سی ایم ایچ راولپنڈی منتقل کردیاگیا ہے۔ زخمی ہونے والے اہلکاروں میں حوالدار لیاقت ، لانس نائیک عبدالرزاق، محمد اسلم، سب انسپکٹر محمد مشتاق اور اختر حسین شامل ہیں۔

دیامر میں کنٹرول روم کے پولیس اہلکار عبدالخالق نے بی بی سی کو بتایا کہ سنیچر کی رات نامعلوم شدت پسندوں نے للنگ دار کے علاقے میں قائم رینجرز کی چیک پوسٹ پر بھاری ہتھیاروں سے حملہ کیا۔ ان کے مطابق فائرنگ کا تبادلہ کافی دیر تک جاری رہا جس میں رینجرز کے پانچ اہلکار شدید زخمی ہوگئے ہیں۔ اہلکار کا کہنا تھا کہ رینجرز کی جوابی کاروائی سے حملہ اور فرار ہوگئے تاہم علاقے میں بڑے پیمانے پر سرچ آپریشن شروع کردیاگیاہے۔

آخری اطلاعات تک کسی قسم کی گرفتاری عمل میں نہیں آئی۔

مقامی لوگوں کے مطابق یہ واقعہ ضلع دیامر اور خیبرپختونخوا کے ضلع کوہستان کے متنازعہ حدود میں پیش آیا۔ کچھ عرصہ پہلے حدود کے تنازع کے باعث وفاقی حکومت نے یہاں پولیس چیک پوسٹ کو ختم کرکے رینجرز چیک پوسٹ قائم کی تھی۔

واضح رہے کہ اس علاقے میں پہلے بھی پولیس اور سیکورٹی اہلکاروں پر دہشت گرد حملے ہوتے رہے ہیں جن میں اب تک پولیس اور سیکورٹی فورسز کے اعلیٰ افسران سمیت متعدد اہلکار ہلاک ہوچکے ہیں۔

تحریک طالبان پاکستان کے ترجمان محمد خراسانی نے ضلع دیامیر میں چیک پوسٹ پر حملے کی ذمہ داری قبول کرلی ہے۔

اسی بارے میں