کنٹونمنٹ بورڈز میں غیر جماعتی انتخابات کا حکم کالعدم

تصویر کے کاپی رائٹ Reuters
Image caption لاہور ہائی کورٹ نے پیر کو تمام درخواستیں منظور کر لیں

لاہور ہائی کورٹ نے ملک میں کنٹونمنٹ بورڈز کے اِنتخابات غیر جماعتی بنیادوں پر کرانے کے احکامات کو کالعدم قرار دے دیا ہے۔

ہائی کورٹ نے یہ حکم پیر کو ایک ہی نوعیت کی مختلف درخواستوں کومنظور کرتے ہوئے دیا ہے۔

تحریک انصاف اور مقامی شہریوں نے کنٹونمنٹ بورڈز کے اِنتخابات غیر سیاسی بنیادوں پر کرانے کے خلاف عدالت سے رجوع کیا تھا۔

لاہور ہائی کورٹ کے جسٹس منصور علی شاہ نے پیر کو درخواست پر کارروائی مکمل ہونے پر مختصر فیصلہ سنایا اور ہدایت کی کہ وہ تمام امیدواروں جنہوں نے آزاد حیثیت سے اپنے کاغذات نامزدگی جمع کرائے ہیں وہ اپنی سیاسی جماعت کا سرٹیفیکٹ دے سکتے ہیں ۔

سماعت کے دوران درخواست گزاروں کی جانب سے یہ موقف اختیار کیا گیا تھا کہ حکومت بلدیاتی انتخابات غیر جماعتی بنیادوں پر کروا رہی تھی لیکن لاہور ہائی کورٹ نے یہ انتخابات جماعتی بنیادوں پر کرانے کا حکم دیا اور اب کنٹونمنٹ بورڈ کے انتخابات بھی غیر جماعتی بنیادوں پر کروائے جارہے ہیں جو آئین اور عدالتی فیصلے کی کھلی خلاف وزری ہے۔

درخواست گزار وکیل وقار مشتاق طور یہ اعتراض بھی اٹھایا کہ کنٹونمنٹ بورڈ قانون کے تحت غیر جماعتی بنیادوں پر انتخابات کرانا اور سیاسی جماعتوں کی حمایت لینے کی پابندی کے بارے میں شق آئین سے متصادم ہے کیونکہ آئین تمام شہریوں کو سیاسی سرگرمیوں کی اجازت دیتا ہے۔

وکیل کے مطابق عدالتی احکامات کے باوجود غیر جماعتی انتخابات توہین عدالت کے مترادف ہے۔

الیکشن کمیشن کی جانب سے 25 اپریل کو ملک بھر کے کنٹونمنٹ بورڈز میں بلدیاتی اِنتخابات کا شیڈول جاری کیا جا چکا ہے۔

پاکستان کی سابق حکمراں جماعت پاکستان پیپلز پارٹی نے کنٹونمنٹ بورڈ میں غیر جماعتی بنیادوں پر انتخابات کروانے کو سپریم کورٹ میں بھی چیلنج کر رکھا ہے۔

اس درخواست میں موقف اختیار کیا گیا ہے کہ سیاسی جماعتیں وفاقی اور صوبائی اسمبلیوں کے علاوہ بلدیاتی انتخابات میں حصہ لے سکتی ہیں تو پھر کنٹونمنٹ بورڈ سیاسی جماعتوں کے لیے نوگو ایریا کیوں بنا ہوا ہے۔

درخواست میں یہ بھی کہا گیا ہے کہ انتخابی عمل میں حصہ لینا تمام سیاسی جماعتوں کا بنیادی حق ہے اور سیاسی عمل میں حصہ لینے کے لیے کسی کو بھی روکنا بنیادی انسانی حقوق کی خلاف ورزی کے زمرے میں آتا ہے۔

پاکستان میں کل 43 کنٹونمنٹ بورڈز ہیں جن میں سے 42 میں بلدیاتی انتخابات 25 اپریل کو ہوں گے اور اس ضمن میں الیکشن کمیشن نے شیڈول بھی جاری کر دیا ہے۔

بلوچستان میں اوڑمارہ کنٹونمنٹ بورڈ کی حدود کے تعین کا مسئلہ چل رہا ہے اس لیے وہاں پر بلدیاتی انتخابات نہیں ہو رہے۔

اسی بارے میں