ذکی الرحمن لکھوی کی نظر بندی کا ریکارڈ طلب

تصویر کے کاپی رائٹ AP

لاہور ہائی کورٹ نے ممبئی حملوں کی سازش تیار کرنے کے الزام میں ملوث ذکی الرحمن لکھوی کی نظر بندی کے بارے میں حساس معلومات اور تمام ریکارڈ طلب کر لیا ہے۔

لاہور ہائی کورٹ نے یہ حکم ذکی الرحمن لکھوی کی درخواست پر منگل کو دیا۔

ہائی کورٹ نے پنجاب حکومت کو ہدایت کی کہ ذکی الرحمن لکھوی کی نظر بندی کے بارے میں تمام ریکارڈ اور حساس معلومات نو اپریل کو پیش کیا جائے۔

نامہ نگار عدیل اکرم کے مطابق ذکی الرحمن لکھوی نے درخواست میں اپنی نظری بندی کو چیلنج کرتے ہوئے موقف اِختیار کیا ہے کہ رویو بورڈ کے احکامات کے بغیر کسی شہری کی چوتھی بار نظر بندی کا حکم نہیں دیا جا سکتا۔

ذکی الرحمن لکھوی کے وکیل نے بتایا کہ اُن کے موکل کی چوتھی بار نظر بندی کے احکامات جاری کیے گئے ہیں اور رویو بورڈ سے بھی کوئی اجازت نہیں لی گئی ہے۔

وکیل نے عدالت کو بتایا کہ اسلام آباد ہائی کورٹ نے ذکی الرحمن لکھوی کی نظر بندی کو کالعدم قرار دیا تھا لیکن اِن احکامات پر عمل درآمد کرنے کے بجائے چوتھی بار نظربند کر دیا۔

ذکی الرحمن لکھوی کے وکیل کے مطابق اُن کے موکل کی دو مقدمات میں ضمانت بھی ہو چکی ہے جس کے بعد اُن کو نظر بند رکھنے کا کوئی جواز نہیں ہے۔

وکیل نے عدالت سے استعدا کی کہ ذکی الرحمن لکھوی کی نظر بندی کے احکامات کو کالعدم قرار دے کر اُن کی رہائی کے احکامات جاری کیے جائیں۔

اسی بارے میں