عوامی شکایات کے ازالے کے لیے مـختصر پیغامات کا آغاز

تصویر کے کاپی رائٹ Getty
Image caption ضلعی انتظامیہ نے پہلی مرتبہ پشاور میں یہ ایس ایم ایس سروس شروع کی ہے

خیبر پختونخوا کے دارالحکومت پشاور میں ضلعی انتظامیہ نے پہلی مرتبہ عوامی شکایات کو حل کرنے کے لیے موبائل فون سے مختصر پیغامات کا سلسلہ شروع کیا ہے۔

پشاور کے شہری اب ڈپٹی کمشنر کو براہ راست اپنی شکایات سے آگاہ کر سکتے ہیں۔

اگر کہیں گندگی پڑی ہے اور اس کی صفائی کا معقول انتظام نہیں ہے، روز مرہ استعمال کی اشیاء کی قیمتیں متعین قیمتوں سے زیادہ وصول کی جا رہی ہیں، نکاسی آب کا مسئلہ ہے اور اس کے علاوہ اس طرح کے اگر کوئی اور مسائل ہوں تو اب شہری ایک مختصر پیغام یا ایس ایم ایس کے ذریعے ڈپٹی کمشنر کو آگاہ کر سکتے ہیں۔

پولیس کے محکمے کے بعد اب ضلعی انتظامیہ نے پہلی مرتبہ پشاور میں یہ ایس ایم ایس سروس شروع کی ہے۔

پشاور کے ڈپٹی کمشنر ریاض محسود نے بی بی سی کو بتایا کہ تین روز میں انھیں 134 شکایات موصول ہوئیں جن میں سے 63 پر کارروائی کی گئی ہے اور 30 سے زیادہ شکایات حل کر دی گئی ہیں۔

ڈپٹی کمشنر کے مطابق اب تک ملنے والی شکایات صفائی، نکاسی آب اور مہنگائی سے متعلق ہیں۔

ریاض محسود نے بتایا کہ پشاور کے بڑے رہائشی علاقے حیات آباد اور یونیورسٹی ٹاؤن سے روز مرہ استعمال کی اشیا کی زیادہ قیمتیں وصول کرنے کی شکایات تھیں تو اندرون شہر سے صفائی اور نکاسی آب کے مسائل کی نشاندہی کی گئی ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ اس کے لیے ڈی سی پی آٹھ تین تین تین نمبر رکھا گیا ہے اور اس سروس کا مقصد انتظامیہ اور عوام کے مابین رابطے کو بحال کرنا ہے۔

اس سے پہلے پولیس کے محکمے میں آن لائن ایف آئی آر اور پولیس کے بارے میں شکایات کے لیے ایس ایم ایس سروس شروع کی جا چکی ہے۔

تعلیم کے محکمے میں اساتذہ اور طالب علموں کی حاضری یقینی بنانے کے لیے موبائل فونز کے ذریعےمانیٹرنگ کا سلسلہ شروع کیاگیا تھا اور اب آج سے ہسپتالوں میں عملے، ادویات اور آلات کی فراہمی کے لیے آزاد مانیٹرنگ یونٹ قائم کر دیا گیا ہے۔

محکمۂ صحت میں طبی سہولیات کی فراہمی کو یقینی بنانے کے لیے موبائل فون کا استعمال کیا جائے گا۔

اسی بارے میں