کراچی میں امریکی نژاد پروفیسر حملے میں زخمی

تصویر کے کاپی رائٹ
Image caption ڈیبرا لوبو گذشتہ کئی سالوں سے پاکستان میں مقیم ہیں

پاکستان کے صوبہ سندھ کے دارالحکومت کراچی میں فائرنگ کے ایک واقعے میں نجی میڈیکل یونیورسٹی کی امریکی نژاد وائس پرنسپل ڈیبرا لوبو زخمی ہوگئی ہیں۔

ایک نامعلوم گروپ نے اس حملے کو اپنے پانچ ساتھیوں کے قتل کا ردعمل قرار دیا ہے۔

ایس ایس پی پیر محمد شاہ کا کہنا ہے ڈیبرا لوبو جناح میڈیکل اینڈ ڈینٹل یونیورسٹی سے گھر جا رہی تھیں کہ شہید ملت روڈ پر دو موٹر سائیکلوں پر سوار مسلح افراد نے ان کا پیچھا کر کے فائرنگ کی، جس سے وہ زخمی ہوگئیں۔

ان کے مطابق ڈیبرا کو پہلے مقامی اور بعد میں آغا خان ہپستال منتقل کیا گیا ہے جہاں ان کی حالت خطرے سے باہر ہے۔

پولیس کے مطابق55 سالہ امریکی نژاد ڈیبرا لوبو، جناح ڈینٹل یونیورسٹی کے سٹوڈنٹس افیئرز کے شعبے کی نائب انچارج ہیں۔

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption ڈیبرا لوبو، جناح ڈینٹل یونیورسٹی کے اسٹوڈنٹس افیئر کے شعبے کی وائس پرنسپل ہیں

انھوں نے ایک پاکستانی سے شادی کی تھی اور گذشتہ کئی سالوں سے وہ یہیں مقیم ہیں۔

دوسری جانب جائے وقوع سے پولیس کو اردو اور انگریزی میں پمفلٹ بھی ملے ہیں، جس میں اس کارروائی کو کیماڑی میں پانچ ’مجاہدین‘ کی ہلاکت کا ردعمل قرار دیا گیا ہے۔

یاد رہے کہ رینجرز نے گذشتہ ہفتے ایک مقابلے میں کالعدم تحریک طالبان کے پانچ کمانڈروں کو ہلاک کرنے کا دعویٰ کیا تھا۔

اس پمفلٹ میں امریکہ کو مخاطب کرتے ہوئے کہا گیا ہے کہ ’ہم اس وقت تک چین سے نہیں بیٹھیں گے جب تک تم پر بھرپور حملہ نہ کریں۔‘

اسی بارے میں