’کراچی میں مقابلہ، تحریکِ طالبان کے چھ دہشت گرد ہلاک‘

تصویر کے کاپی رائٹ BBC World Service
Image caption کراچی میں جاری آپریشن کے دوران قانون نافذ کرنے والے اداروں کی جانب سے مبینہ شدت پسندوں کے خلاف کارروائیوں میں تیزی آئی ہے

پاکستان کے صوبہ سندھ کے دارالحکومت کراچی میں پولیس نے ایک کارروائی میں تحریکِ طالبان سے تعلق رکھنے والے چھ دہشت گردوں کی ہلاکت کا دعویٰ کیا ہے۔

پولیس حکام کے مطابق یہ کارروائی سنیچر کو سہراب گوٹھ کے علاقے گلشنِ سعدی ٹاؤن میں کی گئی۔

ایس ایس پی ملیر راؤ انوار کے مطابق پولیس نے خفیہ اطلاعات پر یہ آپریشن کیا جس میں 250 سے زیادہ اہلکاروں نے حصہ لیا۔

ان کا کہنا تھا کہ ہلاک ہونے والے چھ افراد کا تعلق کالعدم تحریکِ طالبان پاکستان کے ملا فضل اللہ گروپ سے ہے۔

راؤ انوار نے یہ بھی دعویٰ کیا کہ مرنے والوں میں اس گروپ کا ایک اہم کمانڈر احمد بھی شامل ہے جو وزیرستان میں ہونے والے ڈرون حملے میں زخمی ہوا تھا۔

انھوں نے کہا کہ زخمی ہونے کے بعد احمد کراچی میں زیرِ علاج بھی رہا اور آج کی کارروائی میں مارا گیا۔

تصویر کے کاپی رائٹ Getty
Image caption کراچی میں رینجرز اور پولیس شہر کے مختلف علاقوں اور مضافات میں خفیہ اطلاعات کی بنیاد پر کارروائیاں کرتے رہے ہیں

پولیس نے اس مبینہ مقابلے میں ہلاک شدگان کے ٹھکانے سے اسلحہ اور گولہ بارود برآمد کرنے کا بھی دعویٰ کیا ہے۔

کراچی میں جاری آپریشن کے دوران قانون نافذ کرنے والے اداروں کی جانب سے مبینہ شدت پسندوں کے خلاف کارروائیوں میں تیزی آئی ہے۔

رواں ماہ کے آغاز میں بھی رینجرز نے کیماڑی کے علاقے میں تحریکِ طالبان کے ہی پانچ دہشت گردوں کو ہلاک کرنے کا دعویٰ کیا تھا۔

اس حملے کے بعد کراچی میں مقیم ایک امریکی نژاد استاد پر حملہ بھی ہوا تھا اور حملہ آوروں نے اسے اپنے ساتھیوں کی ہلاکت کا بدلہ قرار دیا تھا۔

یاد رہے کہ کراچی میں رینجرز اور پولیس شہر کے مختلف علاقوں اور مضافات میں خفیہ اطلاعات کی بنیاد پر شدت پسندوں اور کالعدم تنظیموں کے ارکان کے خلاف کارروائیاں کرتے رہے ہیں۔

اسی بارے میں