رفیق رجوانہ کو پنجاب کا نیا گورنر بنا دیا گیا

تصویر کے کاپی رائٹ Senate of Pakistan
Image caption رفیق رجوانہ کا تعلق جنوبی پنجاب سے ہے

پاکستان کے سرکاری ذرائع ابلاغ کے مطابق صدرِ پاکستان نے وزیرِ اعظم نواز شریف کی سفارش پر محمد رفیق رجوانہ کو صوبہ پنجاب کا نیا گورنر تعینات کر دیا ہے۔

ملک رفیق رجوانہ کا تعلق جنوبی پنجاب کے ضلع ملتان سے ہے اور وہ 2012 میں مسلم لیگ ن کے ٹکٹ پر ملک کے ایوانِ بالا کے رکن منتخب ہوئے تھے۔

پاکستان کے سرکاری ٹی وی کے مطابق وزیرِ اعظم نے رفیق رجوانہ کی تعیناتی کا فیصلہ جمعرات کو اسلام آباد میں ان سے ملاقات کے بعد کیا تھا۔

پی ٹی وی کے مطابق تعیناتی کے بعد سینیٹ میں خطاب کرتے ہوئے رفیق رجوانہ نے کہا کہ وہ اس عہدے کے لیے اعتماد کیے جانے پر ممنون ہیں اور پارٹی کی قیادت کی توقعات پر پورا اترنے کی کوشش کریں گے۔

ان کا کہنا تھا کہ ان کی تعیناتی جنوبی پنجاب کے لیے اچھی خبر ہے اور وہ اس خطے کی محرومیوں کے ازالے کی کوششیں کریں گے۔

رفیق رجوانہ کا نام ماضی میں بھی اس وقت اس عہدے کے لیے سامنے آیا تھا جب 2013 میں مخدوم احمد محمود نے گورنر کے عہدے سے استعفیٰ دیا تھا۔

تاہم اس وقت پنجاب کی گورنری چوہدری محمد سرور کے حصے میں آئی تھی جو رواں برس کے آغاز میں مستعفی ہو گئے تھے۔

جنوری 2015 سے پنجاب اسمبلی کے سپیکر رانا اقبال صوبے کے قائم مقام گورنر کے طور پر ذمہ داریاں نبھاتے آئے ہیں۔

اسی بارے میں