ِخضدار میں سیلابی ریلے، ہلاکتوں کی تعداد 13 ہوگئی

Image caption انتظامیہ کے مطابق دیگر لاپتہ افراد کی تلاش کا سلسلہ جاری ہے

پاکستان کے صوبہ بلوچستان کے ضلع خضدار میں طوفانی بارشوں اورسیلابی ریلوں کے باعث کم از کم 13 افراد ہلاک ہوگئے ہیں۔

یہ ہلاکتیں ضلع خضدار میں شاہ نورانی کے علاقے میں ہوئی ہیں۔

خضدار انتظامیہ کے ایک سینیئر اہلکار نے بتایا کہ بدھ اور جمعرات کی درمیانی شب شاہ نورانی اور اس کے گردونواح کے علاقوں میں طوفانی بارشیں ہوئی تھیں۔

ان بارشوں کی وجہ سے کوہان کے علاقے میں ند ی نالوں میں طغیانی کے باعث متعدد گھر تباہ ہوگئے اور ان میں موجود لوگ سیلابی ریلے میں بہہ گئے۔

ایک سرکاری اعلامیہ کے مطابق متاثرہ گاؤں میں 20 سے زائد لوگ سیلابی ریلے میں بہہ گئے ہیں۔

اعلامیے کے مطابق ان میں سے 13 افراد کی لاشیں نکالی جاچکی ہیں اور دیگر لاپتہ افراد کی تلاش کا سلسلہ جاری ہے ۔

انتطامیہ کے اہلکار کا کہنا تھا کہ ہلاکتوں میں اضافے کا خدشہ ہے۔

اعلامیہ کے مطابق وزیراعلیٰ بلوچستان ڈاکٹر عبدالمالک بلوچ کی ہدایت پر پی ڈی ایم اے نے 200 خیمے اور دو سو خاندانوں کے لیے خوراک اور دیگر ضروریات زندگی متاثرہ علاقے میں روانہ کردی ہیں۔ اس کے ساتھ ساتھ حب اور دیگر علاقوں سے ڈاکٹروں کی ٹیم اور ضروری ادویات بھی روانہ کی گئی ہیں۔

اسی بارے میں