فاٹا، خیبر پختونخوا میں بارشیں، چھ افراد ہلاک

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption محکمہ موسمیات نے گذشتہ روز پیش گوئی کی تھی کہ کل رات سے بارشوں کا سلسلہ شروع ہو جائے گا

پاکستان کے قبائلی علاقوں اور صوبہ خیبر پختونخوا میں طوفانی بارشوں اور تیز ہواؤں سے بچوں اور خواتین سمیت چھ افراد ہلاک ہو گئے ہیں جبکہ مختلف شہروں میں مکانات اور عمارتوں کو نقصان پہنچا ہے۔

ضلع چارسدہ میں شبقدر کے مقام پر صحبت خان کے مکان کی چھت گرنے سے تین افراد ہلاک ہو گئے۔

ہلاک ہونے والے افراد میں صحبت خان کی بیوی ، بیٹا اور پوتا شامل ہیں۔ اسی طرح چارسدہ میں میاں کلی کے مقام پر ایک مکان کی چھت گرنے سے کامل نامی شخص کی اہلیہ زخمی ہو گئی ہیں۔

ادھر پاکستان کے قبائلی علاقے خیبر ایجنسی میں غنڈی کے مقام پر مکان کی چھت گرنے سے تین بچے ہلاک ہو گئے۔ یہ واقعہ تحصیل جمرود میں پیش آیا۔ مقامی لوگوں کے مطابق شدید بارشوں سے علاقے میں متعدد مکانات کو نقصان پہنچا ہے۔

پشاور سمیت خیبر پختونخوا کے بیشتر علاقوں میں کل رات تیز ہواؤں کے بعد طوفانی بارش شروع ہو گئی جس سے عمارتوں کو نقصان پہنچا اور سڑکوں پر متعدد درخت اور تاریں گر گئیں۔

بارش اس قدر شدید تھی کہ شہر میں سڑکوں پر گاڑیاں رک گئیں جبکہ سربند کے علاقے میں ایک مسافر بس گر گئی جس میں پانچ افراد زخمی ہو گئے۔

محکمہ موسمیات نے گذشتہ روز پیش گوئی کی تھی کہ کل رات سے بارشوں کا سلسلہ شروع ہو جائے گا، جبکہ شمالی علاقوں گلگت اور چترال میں بارشوں کے بعد پاڑی ندی نالوں میں طغیانی اور دریاؤں میں سیلاب آ سکتے ہیں۔

اسی بارے میں