کیمبرج کے امتحانات میں ملالہ یوسفزئی کی نمایاں کامیابی

تصویر کے کاپی رائٹ Getty
Image caption لڑکیوں کی تعلیم کے لیے کی جانے والی خدمات پر ملالہ یوسفزئی کو گذشتہ سال امن کا نوبل انعام دیا گیا تھا

لڑکیوں کی تعلیم کے لیے آواز اُٹھانے والی پاکستانی طالبہ ملالہ یوسفزئی نے کیمبرج کے امتحان میں نمایاں کارکردگی کا مظاہرہ کیا ہے۔

انھوں نے دس مضامین میں چھ میں اے سٹار گریڈ اور چار میں اے گریڈ لیا ہے۔

ملالہ کے والد ضیا الدین یوسفزئی نے ٹوئٹر پر ملالہ کیمبرج امتحان میں ملالہ کے نتیجے کی تفصیلات جاری کی ہیں۔

ملالہ یوسفزئی اور کیلاش ستیارتھی کے لیے امن کا نوبیل انعام

’نوبیل انعام تو ایک طویل سفر کا نقطۂ آغاز ہے‘

ضیاالدین یوسفزئی نے ٹویٹ کی کہ ’میں اور میری اہلیہ طور پکئی کو ملالہ کے چھ مضامین میں اے پلس اور چار مضامین میں اے گریڈ لینے پر فخر ہے۔‘

انھوں نے بتایا کہ ملالہ یوسفزئی نے جی سی ایس ای کے امتحان میں ریاضی کے دو پرچوں کے علاوہ کیمیا، طبعیات، حیاتیات اور مذہبی تعلیم کے پرچوں میں اے سٹار گریڈ حاصل کیا۔

اس کے علاوہ وہ تاریخ، جغرافیہ اور انگریزی زبان اور انگریزی ادب کے پرچوں میں اے گریڈ میں پاس ہوئیں۔

طالبان نے سنہ 2012 میں پاکستان کے علاقے سوات میں ملالہ یوسفزئی پر قاتلانہ حملے کیا تھا جس میں وہ شدید زخمی ہو گئی تھیں۔

لڑکیوں کی تعلیم کے لیے کی جانے والی خدمات پر ملالہ یوسفزئی کو گذشتہ سال امن کا نوبل انعام دیا گیا تھا۔ وہ یہ اعزاز حاصل کرنے والی کم عمر ترین شخص ہیں۔

18 سالہ ملالہ یوسفزئی ان دنوں برطانیہ کے شہر برمنگھم کے سکول میں زیر تعلیم ہیں۔ کیمبرج امتحانات میں انھوں نے سائنس کے مضامین میں بہترین کارکردگی دکھائی۔ ملالہ نے فزکس، کیمسٹری اور بیالوجی میں اے پلس گریڈ حاصل کیا۔

ملالہ نے تاریخ، جغرافیہ اور انگریزی اور انگریزی ادب کے مضامین میں بھی اے پلس گریڈ لیا ہے۔

سوات میں طالبان کے قبضے کے دوران ملالہ نے بی بی سی اردو پر ’گل مکئی‘ کے نام سے ڈائری لکھی تھی، جس میں سوات کا احوال بیان کیا جاتا تھا۔

سوات میں طالبان کے قبضے کے دوران شدت پسندوں نے لڑکیوں کے تعلیمی اداروں کو نذرِ آتش کر دیا تھا۔

اکتوبر سنہ 2012 میں طالبان کے حملے میں شدید زخمی ہونے کے بعد ملالہ یوسفزئی کو علاج کے لیے برطانیہ منتقل کیا گیا۔ وہ ابھی تک برطانیہ ہی میں قیام پذیر ہیں۔

اسی بارے میں