بلوچستان: دستی بم حملے میں دو افراد ہلاک

تصویر کے کاپی رائٹ AFP

پاکستان کے صوبہ بلوچستان کے ساحلی ضلع گوادر میں دستی بم کے ایک حملے دو افراد ہلاک اور دو زخمی ہوگئے۔

گوادر پولیس کے ایک اہلکار نے بتایا کہ یہ حملہ پیر کی شب ایئر پورٹ روڈ پر ملا فاضل چوک پر درزی کی ایک دکان پر کیا گیا۔

اہلکار نے بتایا کہ نامعلوم مسلح افراد نے دکان پر دستی بم پھینکا اور فرار ہونے میں کامیاب ہوگئے۔

زخمی ہونے والے دونوں افراد کو ابتدائی طبی امداد کے لیے ہسپتال منتقل کر دیا گیا۔

پولیس اہلکار کا کہنا تھا کہ دھماکے کے باعث دکان کو بھی نقصان پہنچا۔

اہلکار نے بتایا کہ ہلاک اور زخمی ہونے والوں کا تعلق ہندو برادری سے ہے۔

گوادر کا شمار بلوچستان کے ان علاقوں میں ہوتا ہے جہاں اس سے پہلے بھی ایسے واقعات رونما ہوتے رہے ہیں۔

ادھر کوئٹہ میں گذشتہ شب پولیس کے سرچ آپریشن کے دوران ایک شخص ہلاک جبکہ ایک دوسرے شخص کو گرفتار کر لیا گیا۔

کوئٹہ پولیس کے ذرائع کے مطابق ہلاک ہونے والا شخص اور گرفتار ملزم مبینہ طور پر دہشت گردی کی کاروائیوں میں ملوث تھے۔

ذرائع نے بتایا کہ دونوں ملزمان کچھ عرصہ بیشتر ایس پی سریاب کے حملے میں بھی ملوث تھے جس میں دو پولیس اہلکار ہلاک ہوئے تھے۔

واضح رہے کہ بلوچستان کے دارالحکومت کوئٹہ میں 12 اگست کوگوالمنڈی چوک پر ایک بم دھماکہ ہوا تھا جس کے نتیجے میں پولیس کا ایک اہلکار ہلاک اور چھ دیگر افراد زخمی ہوگئے تھے۔

اسی بارے میں