کراچی میں جیو نیوز کی وین پر فائرنگ سے انجینیئر ہلاک

تصویر کے کاپی رائٹ EPA
Image caption ڈی ایس این جی وین میں چار لوگ موجود ہوتے ہیں لیکن حملے کے وقت دو اتر کر دور کھڑے تھے اس لیے محفوظ رہے

پاکستان کے سب سے بڑے شہر کراچی میں نجی ٹی وی چینل جیو نیوز کی ڈی ایس این جی وین پر حملے میں ایک انجینیئر ہلاک اور ڈرائیور شدید زخمی ہوگیا ہے۔

یہ واقعہ منگل کی شب فیروز آباد تھانے کی حدود شہید ملت روڈ پر پیش آیا ہے۔

کراچی:ٹی وی چینل کی وین پر فائرنگ، تین ہلاک

ایس پی گلشن اقبال عابد قائم خانی کا کہنا ہے کہ موٹر سائیکل پر سوار حملہ آوروں نے ایک نجی شاپنگ پلازہ کے قریب جیو کی وین پر فائرنگ کی۔ جس کے نتیجے میں ڈی ایس این جی آپریٹر انجینیئر ارشد علی جعفری اور ڈرائیور انیس چوہان زخمی ہوگئے۔

ڈی ایس این جی آپریٹر انجینیئر ارشد علی جعفری شدید زخمی ہونے کی وجہ سے جانبر نہ ہو سکے۔

انھوں نے بتایا کہ ایک موٹر سائیکل پر تین افراد سوار تھے جن میں سے دو نے اتر کر فائرنگ کی جبکہ ایک موٹر سائیکل پر ہی موجود رہا۔ فائرنگ کے بعد حملہ آور فرار ہوگئے۔

ایس پی عابد قائم خانی کے مطابق احمد جعفری کو سات گولیاں لگی ہیں۔ زخمی انیس چوہان کو کندھے پر گولی لگی اور ان کی حالت خطرے سے باہر ہے۔

ان کے مطابق اس ڈی ایس این جی وین میں چار افراد موجود ہوتے ہیں لیکن حملے کے وقت دو اتر کر دور کھڑے تھے اس لیے محفوظ رہے۔

پولیس کا کہنا ہے کہ اس حملے میں بھی نائن ایم ایم پستول استعمال کیا گیا ہے، جائے وقوعہ سے گولیوں کے سات خول برآمد کیے گئے ہیں۔

دوسری جانب وزیر اعلیٰ سندھ سید قائم علی شاہ نے جیو ٹی وی کی ڈی ایس این جی وین پر فائرنگ کے واقعے کا نوٹس لیتے ہوئے ایڈیشنل آئی جی کراچی سے فوری طور پر واقعے کی رپورٹ طلب کر لی ہے۔

یاد رہے کہ گذشتہ ایک سال میں کراچی میں جیو کے ملازمین پر یہ دوسرا حملہ ہے، اس سے پہلے نامور صحافی اور جیو کے میزبان حامد میر ایئرپورٹ کے قریب فائرنگ میں شدید زخمی ہوگئے تھے۔

اسی بارے میں