ایف سی کی کارروائی،’کالعدم تنظیموں کے تین ٹھکانے تباہ‘

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption آئی جی ایف سی کا کہنا ہے کہ سیکیورٹی فورسزپر عوام کا اعتماد بڑھنے سے عسکریت پسندوں اورشدت پسندوں کوہرجگہ شکست کاسامنا کرنا بڑرہا ہے

پاکستان کے صوبہ بلوچستان میں فرنٹیئر کور نے سرچ آپریشن کے دوران کالعدم عسکریت پسند تنظیموں کے تین ٹھکانوں کو تباہ کرنے کا دعویٰ کیا ہے۔

کوئٹہ میں ایف سی کے ترجمان کی جانب سے فراہم کردہ معلومات کے مطابق یہ سرچ آپریشن پنجگور، سوئی اور گوادر میں کالعدم عسکریت پسند تنظیموں کے خلاف کیا گیا۔

ترجمان کا کہنا ہے کہ پنجگور میں ہونے والے سرچ آپریشن میں عسکریت پسندوں کے تین ٹھکانوں کو تباہ کیا گیا ۔

ترجمان کے مطابق کالعدم عسکریت پسند تنظیموں سے تعلق کے الزام میں گوادر سے دو اور سوئی سے ایک شخص کو گرفتار بھی کیا گیا۔

خیال رہے کہ پنجگور اور سوئی بلوچستان کے ان اضلاع میں شامل ہیں جہاں سکیورٹی فورسز ماضی میں بھی کارروائیاں کرتی رہی ہیں۔

ان علاقوں میں بلوچ مزاحمت کاروں کی جانب سے حکومتی افواج کو نشانہ بنانے کے واقعات بھی پیش آتے رہتے ہیں۔

ادھر انسپیکٹر جنرل فرنٹیئر کور میجر جنرل شیر افگن نے پنجگور میں عمائدین سے خطاب کرتے ہوئے کہا ہے ضلعے میں پنجگورمیں امن کا قیام سب سے بڑی کامیابی ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ عوام صوبے میں قیام امن ،ترقی اور خوشحالی کے لیے عسکریت پسندوں اور شدت پسندوں کے خلاف سکیورٹی فورسز کے ساتھ ہر ممکن تعاون کریں تاکہ ان کے خلاف بھرپور کارروائی کی جا سکے۔

آئی جی ایف سی نے کہا کہ سکیورٹی فورسز پر عوام کا اعتماد بڑھنے سے عسکریت پسندوں اور شدت پسندوں کو ہر جگہ شکست کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے۔

انھوں نے کہا پُرامن بلوچستان پالیسی کے تحت ہتھیار جمع کروا کر قومی دھارے میں شامل ہونے والے گمراہ نوجوانوں کی بھر پور معاونت کی جائےگی۔

اسی بارے میں