زلزلے میں ہلاکتوں کی تعداد 272، امدادی کام جاری

تصویر کے کاپی رائٹ Other

پاکستان کے قدرتی آفات سے نمٹنے کے ادارے این ڈی ایم اے کے مطابق پیر کو آنے والے شدید زلزلے کے نتیجے میں ملک بھر میں ہونے والی ہلاکتوں کی مجموعی تعداد 272 ہو گئی ہے جبکہ 1909 افراد زخمی ہوئے ہیں۔

زلزلے سے خیبر پختونخوا سب سے زیادہ متاثر ہوا ہے جہاں تازہ ترین خبروں کے مطابق ہلاک ہونے والے افراد کی تعداد 225 اور زخمیوں کی تعداد 1706 ہے۔ حکام نے بتایا ہے کہ سب سے زیادہ ہلاکتیں ضلع شانگلہ میں ہوئیں جہاں 50 افراد ہلاک ہوئے۔

متاثرین کے لیے امداد کا اعلان

متاثرین اب بھی امداد کے منتظر

کب کیا ہوا

حالیہ زلزلہ اور 2005 کا زلزلہ

چترال سے 32 ہلاکتوں کی تصدیق ہوئی ہے تاہم وہاں کی مقامی انتظامیہ کا کہنا ہے کہ ہلاک ہونے والوں کی تعداد 37 ہے اور متعدد کچی بستیاں مکمل طور پر منہدم ہو چکی ہیں۔

قبائلی علاقے فاٹا میں بھی تباہی ہوئی ہے جہاں ہلاکتوں کی تعداد 30 سے تجاوز کر چکی ہے۔ سب سے زیادہ باجوڑ ایجنسی متاثر ہوئی جہاں 21 ہلاکتیں ہوئیں اور 300 سے زیادہ مکانات تباہ ہوئے۔

تاہم قدرتی آفات سے نمٹنے کے ادارے پی ڈی ایم اے اور این ڈی ایم اے کے اعداد و شمار میں مکانات کے تباہ ہونے کے ضمن میں خاصا فرق پایا جا رہا ہے۔

این ڈی ایم اے کی جانب سے جاری اعداد و شمار کے مطابق خیبر پختونخوا میں 12968 مکانات تباہ ہوئے ہیں لیکن پی ڈی ایم اے کا کہنا ہے کہ صوبے میں تباہ ہونے والے مکانات کی تعداد 15689 ہے۔

اسی طرح این ڈی ایم نے قبائلی علاقے باجوڑ ایجنسی میں تباہ ہونے والے مکانات کی تعداد 300 بتائی ہے جبکہ پی ڈی ایم اے کے مطابق یہ تعداد 1700 ہے۔

دوسری جانب پی ڈی ایم اے کی جانب سے اب تک سامنے آنے والے اعداد و شمار میں صرف چار اضلاع کے تعلیمی اداروں کو پہنچنے والے نقصان کے اعداد و شمار سامنے آئے ہیں۔

تصویر کے کاپی رائٹ Other

پی ڈی ایم کے اہلکار یوسف ضیاء نے بی بی سی اردو کی حمیرا کنول کو بتایا کہ اب تک کل 155 تعلیمی اداروں کی تباہی کی خبر موصول ہوئی ہے تاہم ابھی دیگر علاقوں سے مزید اعداد و شمار موصول ہو رہے ہیں۔

انھوں نے بتایا کہ سب سے زیادہ تعلیمی ادارے ضلع ٹانک میں متاثر ہوئے جن کی تعداد 53 ہے جبکہ دیر بالا میں 45 سکول تباہ ہوئے۔

لکی مروت میں تباہ ہونے والے سکولوں کی تعداد 34 ہے جبکہ صوابی میں آٹھ تعلیمی ادارے تباہ ہوئے ہیں۔

بنوں میں کوئی ہلاکت نہیں ہوئی اور نہ ہی کسی مکان کو نقصان پہنچنے کی اطلاع سامنے آئی ہے تاہم وہاں بھی 15 سکول زلزلے سے متاثر ہوئے ہیں۔

اسی بارے میں