پنجاب میں جیتنے والے امیدواروں کے جلسے جلوسوں پر پابندی

تصویر کے کاپی رائٹ Getty
Image caption پنجاب اور سندھ میں ہونے والے بلدیاتی انتخابات کے پہلے مرحلے میں پرتشدد وقعات کے دوران 13 افراد ہلاک ہوئے ہیں

پاکستان کے صوبہ پنجاب اور سندھ میں ہونے والے بلدیاتی انتخابات کے پہلے مرحلے میں مختلف شہروں میں ہونے والے پر تشدد واقعات کے بعد پنجاب حکومت نے بلدیاتی انتخابات کے دوسرے مرحلے میں جیتنے والے امیدوراوں کے جلسے جلوس نکالنے پر پابندی عائد کر دی ہے۔

اس پابندی کا فیصلہ وزیر اعلیٰ پنجاب شہباز شریف کی زیر صدارت قانون نافذ کرنے والے اداروں کی جانب سے بلدیاتی انتخابات کے پہلے مرحلے کے دوران سکیورٹی کی صورتحال کا جائزہ لینے کے لیے ہونے والے اجلاس کے دوران کیا گیا۔

بلدیاتی الیکشن:’پنجاب میں مسلم لیگ ن، سندھ میں پیپلز پارٹی کر برتری‘

بی بی سی کی نامہ نگار شمائلہ جعفری کے مطابق یہ پابندی پنجاب کے ضلع ننکانہ صاحب اور سندھ کے ضلع خیر پور میں بلدیاتی انتخابات کے پہلے مرحلے کے دوران پیش آنے والے پر تشدد واقعات کے بعد لگائی گئی ہے۔

صوبہ سندھ کے ضلع خیرپور میں انتخابی مخالفین میں تصادم کے نتیجے میں 11 افراد ہلاک ہو ئے جبکہ ننکانہ صاحب میں پاکستان مسلم لیگ نون اور پاکستان تحریک انصاف کے کارکنوں کے درمیان تصادم میں دو افراد ہلاک اور دو زخمی ہوئے ہیں۔

بی بی سی کے نامہ نگار حسن کاظمی نے ضلع خیرپور کے ڈسٹرکٹ پولیس آفیسر پیر محمد شاہ کے حوالے سے بتایا ہے کہ یہ تصادم مسلم لیگ فنکشنل اور آزاد گروپ سچل سرمست کے حامیوں کے درمیان جونیجو پولنگ سٹیشن پر ہوا۔

اس کے علاوہ سکھر، گھوٹکی ، جیکب آباد ، کشمور ، قمبر شہداد کوٹ ، لاڑکانہ ، اور شکارپور میں بھی انتخابی عمل کے دوران پولنگ سٹیشنوں کے باہر ہونے والے جھگڑوں اور تصادم میں متعدد افراد زخمی ہوئے۔

سنیچر کو ہونے والے بلدیاتی انتخابات کے پہلے مرحلے میں پنجاب کے 12 اضلاع اور سندھ کے آٹھ اضلاع میں لاکھوں ووٹرز نے اپنا حق رائے دہی استعمال کیا۔

بلدیاتی انتخابات کے پہلے مرحلے میں غیر سرکاری، غیر حتمی نتائج کے مطابق پنجاب میں مسلم لیگ نون پہلے، آزاد امیدوار دوسرے اور پاکستان تحریک انصاف تیسرے نمبر پر ہیں۔

دوسری جانب بی بی سی کے نامہ نگار کے مطابق ابتدائی نتائج کے مطابق سندھ میں جن آٹھ اضلاع میں پولنگ ہوئی وہاں پاکستان پیپلز پارٹی کو برتری حاصل ہے جبکہ اس کے کئی امیدوار پہلے ہی بلامقابلہ بھی منتخب ہو چکے ہیں۔

اسی بارے میں