کوئٹہ میں فرقہ وارانہ ٹارگٹ کلنگ میں ایک شخص ہلاک

تصویر کے کاپی رائٹ b
Image caption کوئٹہ میں حالیہ برسوں میں شیعہ برادری پر حملوں میں اضافہ ہوا ہے

پاکستان کے صوبہ بلوچستان کے دارالحکومت کوئٹہ میں فرقہ وارانہ ٹارگٹ کلنگ کے ایک واقعہ میں ایک شخص ہلاک ہو گیا ہے۔

یہ واقعہ منگل کوکوئٹہ شہر میں جان محمد روڑ پر پیش آیا۔

اس واقعہ کے خلاف وحدت المسلمین نے علمدار روڈ پر احتجاج کیا ہے اور قاتلوں کی فوری گرفتاری کا مطالبہ کیا ہے۔

انڈسٹریل پولیس سٹیشن کے ایک سینیئر اہلکار نے بی بی سی کو بتایا کہ ہلاک ہونے والا شخص موٹر مکینک تھا اور صبح جان محمد روڑ پر واقع اپنے گیراج کی جانب جا رہا تھا کہ ایک موٹر سائیکل پر سوار دو نامعلوم افراد نے اس پر فائرنگ کر دی۔

اہلکار نے بتایا کہ ایک گولی اس کے سر میں لگی اور شدید زخمی ہونے کے باعث وہ موقع پر ہلاک ہو گیا۔

دونوں حملہ آور جائے وقوعہ سے فرار ہونے میں کامیاب ہوگئے۔

پولیس اہلکار نے بتایا کہ ہلاک ہونے والے شخص کی عمر 60 سال کے قریب تھی اور اس کا تعلق شیعہ مسلک سے تھا۔

اس واقعے کے بارے میں تحقیقات کا حکم دیا گیا ہے تاہم پولیس اہلکار نے ابتدائی تحقیق کے حوالے سے بتایا کہ یہ فرقہ وارانہ ٹارگٹ کلنگ کا واقعہ ہے۔

کوئٹہ شہر میں بدامنی کے دیگر واقعات کے ساتھ ساتھ فرقہ وارانہ ٹارگٹ کلنگ کے واقعات بھی رونما ہو رہے ہیں تاہم حکام کا کہنا ہے کہ پہلے کے مقابلے میں ان میں بڑی حد تک کمی آئی ہے۔

اسی بارے میں